سرورق / خبریں / کرناٹک میں کانگریس ۔ جے ڈی ایس کی دوسری بار مخلوط حکومت رام کرشنا ہیگڈے کی قیادت میں پہلی مخلوط حکومت قائم ہوئی تھی –

کرناٹک میں کانگریس ۔ جے ڈی ایس کی دوسری بار مخلوط حکومت رام کرشنا ہیگڈے کی قیادت میں پہلی مخلوط حکومت قائم ہوئی تھی –

بنگلورو -(ڈیلی پاسبان) کرناٹک میں 4مرتبہ مخلوط حکومت قائم ہوئی ہے ۔ پہلی بار 1983ء میں رام کرشنا ہیگڈے کی قیادت میں پہلی مخلوط حکومت تشکیل ہوئی تھی ۔ اس وقت کانگریس سے کنارہ کشی اختیار کرکے ایس بنگارپا نے ایک دوسری پارٹی قائم کی تھی ۔ کرناٹک میں بغیر کانگریس کے حکومت سازی کے لئے جنتا پارٹی اور کرانتی رنگا نے مل کر جنتا پارٹی کے سمبل کا استعمال کرتے ہوئے ایک ہی انتخابی منشور تیار کیا تھا ۔ 95 سیٹیں حاصل کرنے والے جنتا رنگا کو مکمل اکثریت نہیں ملی تھی اس کے لئے بنگارپا کی کرانتی رنگا کے ساتھ اتحاد کرنا پڑا ۔ اس موقع پر اس وقت کے پارٹی سربراہ ایچ ڈی دیوے گوڈا اور ان کے حامیوں نے بنگارپا کو وزیر اعلیٰ بنانے پر سخت اعتراض کیا اور کہا کہ اگر بنگارپا کو وزیر اعلیٰ بنایا گیا تو وہ پارٹی ہی چھوڑدیں گے ۔ جبکہ اس وقت جنتا پارٹی سب سے بڑی مقامی پارٹی ما نی جاتی تھی۔ دیوے گوڈا اور ان کے حامیوں کی دھمکی کے سبب پارٹی میں لیڈروں کی قلت کا سامنا کرنا پڑا ۔ 10جنوری 1983 میں مارکس وادی کمیونسٹ پارٹی کی حمایت حاصل کرکے جنتا پارٹی سے رام کرشنا ہیگڈے کو وزیر اعلیٰ بنایا گیا ۔ اس کے بعد 2004 میں کانگریس کو صرف 65 سیٹیں ملیں جبکہ بی جے پی 79سیٹوں پر سبقت حاصل کی تھی ۔ آخر میں جے ڈی ایس اور کانگریس نے 50:50 کے تحت حکومت کرنے کا فیصلہ لیا ۔ اس موقع پر کانگریس سے دھرم سنگھ کو وزیر اعلیٰ اور جے ڈی ایس سے سدارامیا کو نائب وزیر اعلیٰ کے عہدے پر فائز کیا گیا ۔ 2005ء میں منعقدہ پنچایت انتخابات میں مخلوط پارٹیوں کے کارکنوں کے درمیان شروع ہوئی جھڑپ سمیت کئی وجوہات کے سبب حکومت تحلیل ہوگئی ۔ جے ڈی ایس کے کئی اسمبلی اراکین نے ایچ ڈی کمار سوامی کی قیادت میں بی جے پی کے ساتھ مل کر مخلوط حکومت قائم کی ۔ 3 فروری 2006 کمار سوامی وزیر اعلیٰ اور بی جے پی کے بی ایس ایڈی یورپا نائب وزیر اعلیٰ کے عہدے پر فائز ہوئے ۔ اس موقع پر کمار سوامی اور ایڈی یورپا کے درمیان 20-20 مہینوں کی حکومت سازی کرنے کے متعلق معاہدہ ہوا تھا ۔ اور یہ بھی معاہدہ ہوا تھا کہ پہلے 20مہینے کمار سوامی وزیر اعلیٰ رہیں گے جبکہ بقیہ 20 مہینوں تک ایڈی یورپا کو وزیر اعلیٰ بنایا جائیگا ۔ معاہدہ کے مطابق کمار سوامی نے اپنی پہلی میعاد مکمل کی اور جب بی ایس ایڈی یورپا کی وزیر اعلیٰ بننے کی باری آئی تو کمار سوامی نے حمایت واپس لے لی ۔ اس وقت تیسری مخلوط حکومت بھی تحلیل ہوگئی ۔ اب 15ویں اسمبلی انتخابات میں کسی بھی پارٹی کو اکثریت نہیں ملی ۔ بی جے پی نے حکومت سازی کیلئے ایڑی چوٹی کا زور لگایا لیکن کامیابی نہیں ملی ۔ اب ایچ ڈی کمار سوامی کی قیادت میں چوتھی مخلوط حکومت قائم ہوئی ہے ۔

 

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: