سرورق / خبریں / ہندوستان-فرانس جیسے دو عظیم جمہوری ملکوں کے درمیان تعلقات ’تاریخی‘: میکرون

ہندوستان-فرانس جیسے دو عظیم جمہوری ملکوں کے درمیان تعلقات ’تاریخی‘: میکرون

نئی دہلی۔ فرانس کے صدر ایمینوئل میكرو ن نے دہلی اورفرانس کے تعلقات کو تاریخی قرار دیتے ہوئے آج کہا کہ ان کے دورہ سے دونوں ممالک کے درمیان خاص کر، دفاع اور سیکورٹی کے شعبوں میں باہمی تال میل کے ایک نئے دور کا آغاز ہوگا۔ میکرون نے راشٹر پتی بھون میں روایتی استقبالیہ تقریب کے دوران کہا’’میں ہندوستان آ کر بہت خوش ہوں اور خود کو نازاں محسوس کر رہا ہوں۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے گزشتہ سال جولائی میں اپنے فرانس دورے کے دوران مجھے اپنے ملک آنے کی دعوت دی تھی۔ میرا ارادہ دونوں ممالک کے درمیان خاص کر، دفاعی اور سیکورٹی کے شعبوں میں شراکت کا ایک نئے دور کا آغاز کرنے کا ہے۔‘‘ْ
انہوں نے دونوں ممالک کے تعلقات کو تاریخی قرار دیتے ہوئے کہا’’میں سمجھتا ہوں کہ ہمارے درمیان بہت بہتر تال میل ہے۔ دو عظیم جمہوری ممالک کے درمیان تعلقات تاریخی ہیں‘‘۔ اس سے قبل صدر رام ناتھ كووند اور وزیر اعظم نریندر مودی نے مسٹر میكرون اور ان کی اہلیہ بریگت میری کلاؤڈ میکرون کا راشٹر پتی بھون میں استقبال کیا ۔ میكرون کے ساتھ ان کی کابینہ کے سینئر ارکان بھی آئے ہوئے ہیں۔ وزیر اعظم مودی نے مسٹر میكرون کا ہوائی اڈے پر استقبال کیا۔ مسٹر میکرون چار روزہ دورے پر کل دیر رات یہاں پہنچے۔ مودی پروٹوکول توڑ کران کا استقبال کرنے کے لئے خود ہوائی اڈہ پہنچے۔
فرانسیسی صدر اپنے دورہ کے دوران یہاں دو روزہ شمسی توانائی کانفرنس میں حصہ لیں گے۔ یہ کانفرنس 10 سے 11 مارچ تک راجدھانی دہلی میں ہوگی۔ اس کانفرنس میں تقریبا 60 ممالک کے نمائندے حصہ لیں گے۔ فرانسیسی صدر مودی کے ساتھ دو طرفہ مذاکرات بھی کریں گے۔ دونوں لیڈر باہمی اہمیت کے حامل علاقائی اور بین الاقوامی مسائل پر بھی بات چیت کریں گے۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: