سرورق / بین اقوامی / ہندستان اہم مینوفیکچرنگ مرکز کے طورپر بدل رہا ہے : مودی

ہندستان اہم مینوفیکچرنگ مرکز کے طورپر بدل رہا ہے : مودی

کنپلا، یوگانڈہ ، ’میک ان انڈیا‘ تیزی سے ہندستان کی پہچان بن رہا ہے وزیراعظم نریندر مودی نے منگل کو یوگانڈہ کی راجدھانی کنپلا میں غیرمقیم ہندستانیوں سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ ہندستان مینوفیکچرنگ اور اسٹارٹ اپ کے عالمی مرکز کے طورپر ابھر رہا ہے۔

مسٹر مودی نے کہاکہ اب وہ دن دور نہیں جب افریقہ میں اسمارٹ فون استعمال کرنے والے لوگ ہندستان میں بنے سامان خریدیں گے۔ انہوں نے کہاکہ کاروں، اسمارٹ فون سمیت ’ہندستان میں تیار کردہ‘ کئی سامان اس وقت ان ممالک میں درآمد ہورہے ہیں جہاں سے کبھی ہندستان اپنے استعمال کے لئے درآمد کرتا تھا۔

وزیراعظم نے کہاکہ ہندستان ٹرین کی پٹریاں اور میٹرو ٹرین کے ڈبے بنا رہا ہے اور سیٹلائٹ تیار کررہا ہے۔ انہوں نے کہاکہ کوریا کی اہم موبائل بنانے والی کمپنی سیمسنگ نے حال ہی میں راجدھانی سے ملحق نوئیڈا میں دنیا کا سب سے بڑا موبائل فون مینوفیکچرنگ پلانٹ کھولا ہے۔ انہوں نے کہاکہ گزشتہ چار برسوں میں ہندستان میں گیارہ ہزار اسٹارٹ اپ رجسٹرڈ ہوئے ہیں اور ہندستان اسٹارٹ اپ ایک مرکز بن رہا ہے۔

مسٹر مودی نے یوگانڈہ اور دیگر افریقی ممالک کے ساتھ ہندستان کے تعلقات کے بارے میں کہا کہ یوگانڈہ جیسے ممالک کے ساتھ ہندستان کا رشتہ آزادی کی لڑائی اور سخت محنت کا ہے۔
مسٹر مودی نے کہاکہ وسائل سے مالا مال اب ہندستان کی خارجہ پالیسی کے مرکز میں ہے۔ ہندستانی حکومت 18نئے سفارتخانے کھولے گی۔ اس کے ساتھ ہی افریقہ میں ہندستانی مشن کی مجموعی تعداد 47ہوجائے گی۔
انہوں نے کہاکہ ہندستان اور افریقہ کے مابین تجارت میں 32فیصد کا اضافہ ہوا ہے۔ انہوں نے کہاکہ ان کی حکومت پچاس ہزار افریقی طلبا کو 60کروڑ ڈالر کی اسکالرشپ دینے کے لئے عہد بند ہے تین ارب ڈالر کی اسکیموں کے لئے کریڈٹ لائننوں کو بھی منظوری دے دی گئی ہے۔
ہندستان کے ذریعہ شروع کئے گئے بین الاقوامی شمسی توانائی اتحاد کے بارے میں وزیراعظم نے کہاکہ یہ اطمینا ن بخش ہے کہ بیشتر افریقی ممالک اس اتحاد میں شامل ہوئے ہیں اور ا سکے مجموعی اراکین میں سے پچاس فیصد سے زائد افریقی ملک اس میں شامل ہیں۔
انہوں نے گجرات کے وزیراعلی کے طورپر 2007میں یوگانڈہ کے دورہ کو بھی یاد کیا۔ ہندستانی برادری کے لوگوں کے پروگرام میں مسٹر مودی اور یوگانڈہ کے صدر یوویری موسیوینی نے ہندستان کے پہلے وزیر داخلہ سردار ولبھ بھائی پٹیل کے مجسمہ کی نقاب کشائی بھی کی۔
وزارت خارجہ کے ترجمان رویش کمار نے ٹوئٹ کرکے کہا کہ یوگانڈہ کے صدر موسوینی نے ہندستانی برادری کے لوگوں کی کھل کر تعریف کی۔ انہوں نے کمیونٹی استقبالیہ تقریب میں اپنے خطاب میں یوگانڈہ کی اقتصادی ترقی میں ہندستانیوں کی سخت محنت اور تعاون کے لئے تعریف کی۔
بعد میں مسٹر مودی نے ٹوئٹر پر لکھا کہ کمپلا میں کمیونٹی پروگرام پرحوصلہ افزائی کرنے والا رہا۔ ہندستان اور یوگانڈہ کے مابین گہرے تعلقات کے بارے ، غیرمقیم ہندستانیوں کی حصولیابیوں اور ہندستان میں ہونے والی شفاف تبدیلیوں کے بارے میں بات کرتے ہوئے اچھا لگا۔
ہندستان اور یوگانڈہ کے مابین دفاعی تعاون کے شعبہ میں چار معاہدے کئے گئے۔ حکام اور سفارتکاروں کو ویزا کی ضرورت نہیں ہوگی۔ اس کے علاوہ ثقافتی تبادلہ پروگرام اور مواد کی جانچ لیباریٹری کے تعلق سے رضامندی نامہ پر دستخط کئے گئے۔
وزیراعظم نریندر مودی نے توانائی، بنیادی ڈھانچہ ، زراعت اور ڈیری شعبوں کے لئے 20کرور ڈالر قرض دینے کا اعلان کیا ہے۔
مسٹر مودی بدھ کو یوگانڈہ کی پارلیمنٹ سے خطاب کریں گے۔ یوگانڈہ کی پارلیمنٹ سے خطاب کرنے والے وہ پہلے ہندستانی وزیراعظم ہوں گے۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: