سرورق / خبریں / گھریلو صنعتو ں اور کھادی چیزوں کے لئے مارکیٹنگ کی سہولت اور سبسیڈی دی جائے گی: سدارامیا

گھریلو صنعتو ں اور کھادی چیزوں کے لئے مارکیٹنگ کی سہولت اور سبسیڈی دی جائے گی: سدارامیا

بنگلور( پی ین ین ):۔ وزیر اعلیٰ سدارامیا نے کہا کہ گھریلوں صنعتوں اور کھادی کی چیزوں کے لئے حکومت سے مارکیٹنگ اور سبسیڈی کی سہولت فراہم کی جائے گی۔ انہوں نے فریڈم پارک میدان میں ایک ماہ تک چلنے والے قومی سطح کے کھادی اور گرا م ادیوگ بورڈکی جانب سے انعقاد نمائشی اور فروخت میلہ کا افتتاح کرتے ہوئے کہ کہ کرناٹک میں بہتریں طریقہ سے کام کررہے گھریلو صنعتوں کو ہر سال ایوارڈ دینے کا فیصلہ لیا گیا ہے ۔ میڈیم ۔اسمال اور اسمال اسکیل انڈسٹریس ( ایم ایس ایم سی ) کو مارکیٹنگ کی سہولت فراہم کرانے کے مقصد سے ایم ایس ایم ۔ بڑی چیزوں کو بنانے والوں اور پبلک سیکٹر کے صنعتوں کو ایک ہی مقام پر جمع کرنے کے مقصد سے ریاستی اور قومی سطح پر میلو ں کا انعقاد کرنے کے لئے حکومت سے مالی امداد فراہم کی جارہی ہے ۔روزگار اور سرمایہ کاری کے مواقع فراہم کرانے کے مقصد سے ہی حکومت نے نئی صنعتی پالیسی جاری کی تھی ۔اس سال کھلونے ۔ موبائل فون تیار کرنے ۔نیا بلیٹ۔ الیکٹرانکس چیزوں اور جوڑنے کی چیزوں اور روزگار کو فروغ دینے والے شعبہ جات کو فروغ اور ترقی دی جارہی ہے ۔انہوں نے کہا کہ کرناٹک اسٹیٹ ٹائر ڈیولپمنٹ کارپوریشن میں کام کررہے ملازمین کی تنخواہوں میں اضافہ کرنے کے ساتھ ہی انہیں کئی سہولیات فراہم کی جارہی ہیں۔کھادی اور گرام ادیوگ کارخانو ں کی ترقی اور اسے فروغ دینے کے مقصد سے پبلک سرویس سنٹرس کے قیام کے لئے چار کروڑ روےئے جاری کئے گئے ہیں۔مرکزی حکومت کے تعاون سے بنگلور اور بیلگاوی میں 10کروڑ روپےئے خرچ کرکے کھادی پلازہ تعمیر کیا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ در ج فہرت اور قبائل کے صنعت کاروں کو نئے اورچھوٹی صنعتوں کے لئے فی یونٹ بجلی کے لئے دو روپیوں کی سبسیڈی دی جارہی ہے ۔صنعتوں کو شروع کرنے کے لئے درج فہرست وقبائل کے صنعت کاروں کو قرضہ جات حاصل کرتے وقت رجسٹریشن فیس ۔ لیگل فیس۔ ڈسٹری بیوشن فیس اور دیگر فیس کی رقم خود حکومت برداشت کررہی ہے ۔ 100 سی اور 100 ڈی ماڈل کے شیڈس کو رعایت قیمتی میں درج فہرست اور قبائلی صنعت کاروں کو کرناٹک اسٹیٹ شمال انڈسٹریس ڈیولپمنٹ کارپوریشن کی جانب سے تقسیم کئے جائیں گے ۔نقصان میں چل رہے چھوٹی صنعتوں کا قرضہ 46کروڑ روپےئے معاف کیا گیا ہے ۔پہلے زمینات کو 99سال کے لئے کنٹراکٹ پر دی جاتی تھیں اب اس کی معیاد 10سال کردی گئی ہے۔ انڈسٹریل ڈیولپمنٹ بورڈ اور انڈسٹریل ایریا ڈیولپمنٹ بورڈسے دو ایکٹر کی زمین فراہم کی جارہی ہے ۔ واپس پیٹ میں سنٹر آف ایکسلنس کے قیام کے لئے پانچ کروڑروپےئے جاری کئے گئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ بنکروں کے لئے 150کروڑروپیوں کا خصوصی پیکیج کا اعلان کیا گیا ہے ۔کم ٹنشن کی بجلی کی سہولت حاصل کرہے دی پےئرہینڈلوم کو 50فیصدی بجلی کی سبسیڈی دی جارہی ہے ۔کے ایس ٹی آئی ڈی سی کے ذریعہ ہاویری۔ ہوسادرگہ ۔بناپٹی اور گوری بدنور میں پاورلوم کا قیام اور بیلگافی ضلع کے پنٹابالے کندری میں گودام اور عوامی سہولیات مرکزکاتعمیرائی کام جاری ہے۔ اس موقعہ پر کھادی اور گرام ادیوگ بورڈ کے چیرمن این رمیش نے کہا کہ اس میلے سے لگ بھگ40 کروڑ روپےئے کی آمدنی ہونے کا امکان ہے۔ گذشتہ سال میلہ میں ایک لاکھ پانچ ہزار لوگوں نے شرکت کی تھی اور 31کروڑ روپیوں کا کاروبار ہوا تھا۔ اس بار 1.50لاکھ لوگ آنے کا امکان ہے ۔اس موقعہ پر پردیش کانگریس کے کارگذار صدر دنیش گنڈوارؤ۔ مےئر سمپت راج۔ بورڈکے ڈائرکٹر سوم شیکھیر اور چیف ایکزی کیوٹیو افسراجئے ویرا بھدراسوامی اور دیگر افسران حاضر تھے۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: