سرورق / کھیل / کے کے آر کے سامنے ممبئی کیلئے آر پار کی صورتحال

کے کے آر کے سامنے ممبئی کیلئے آر پار کی صورتحال

ممبئی۔  (یو این آئی) آئی پی ایل 11 ؍کے مقابلے اب کئی ٹیموں کے لئے کرو یا مرو کے دور میں پہنچتے جارہے ہیں اور تین بار کی چمپئن ممبئی انڈینس کے لئے اتوار کو کولکتہ نائٹ رائیڈرس کے خلاف یہاں ہونے والا مقابلہ ٹورنمنٹ میں اس کے آگے کی سمت طے کرنے والا میچ ثابت ہوگا۔روہت شرما کی کپتانی والی ممبئی کی ٹیم نے اس سیزن میں کافی اتار چڑھاؤ والی کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے ۔ ممبئی نے اب تک 9میچوں میں سے 3؍ میچ جیتے اور 6؍ میچ گنوائے ہیں۔ ممبئی نے کل اندور میں کنگس الیون کے خلاف مقابلہ مشکل ہونے کے باوجود جیت لیا تھا اور خود کو ٹورنمنٹ میں قائم رکھا تھا۔ ممبئی کو اگر پلے آف میں جانے کی امیدیں برقرار رکھنی ہیں تو اسے اپنے اس سلسلے کوباقی کے پانچوں لیگ میچوں میں قائم رکھنا ہوگا ۔ اگر وہ ایسا نہ کرپائی تو ایک بھی شکست اس کا کھیل بگاڑ دے گی۔دوسری جانب کے کے آر کی ٹیم 9 میچوں میں پانچ فتوحات،10؍ پوائنٹ اور تیسرے مقابلے کے ساتھ فی الحال بہتر پوزیشن میں ہے لیکن اس کے لئے باقی کے پانچ میچوں میں سے تین میچ جتینے لازمی ہیں تاکہ اس کی پلے آف کی پوزیشن یقینی ہوسکے ۔ کولکتہکے کپتان دنیش کارتک چاہیں گے کہ اگلے کچھ میچوں میں ہی پلے آف یقینی بنالیا جائے تاکہ آخری میچوں تذبذب کی صورتحال نہ رہے ۔آئی پی ایل 11 میں ممبئی اور کولکتہ کے مابین یہ پہلا مقابلہ ہے اور دونوں کے مابین دوسرا مقابلہ9؍مئی کو کولکتہکے ایڈن گارڈن میں ہونا ہے ۔ممبئی نے کل اندور میں آخری اووروں میں میچ جیتنے والی بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کیا جس سے اس کی امیدیں برقرار ہیں۔ اوپنر سوریہ کمار یادو (57) حالانکہ اپنی نصف سنچری کی بدولت مین آف دی میچ قرار دیئے گئے لیکن ٹیم کو جیت کی منزل پر تک لے جانے کا کریڈٹ کپتان روہت شرما (ناٹ آؤٹ 24) نیز کرنال پانڈیا (ناٹ آؤٹ 31) کے آخری اووروں میں بہترین حملوں کو جاتا ہے جنہوں نے پانچویں وکٹ کے لئے محض 21 ؍گیندوں میں ناٹ آؤٹ 56 رن کی میچ فاتح شراکت داری کی۔کپتان روہت کے بلے بازی آرڈر کے بارے میں بحث جاری ہے کہ انہیں اوپننگ میں آنا چاہئے تھا یا پھر چوتھے ، پانچویں نمبر پر کھیلنا چاہیے ، جیسا وہ ابھی کررہے ہیں۔ ممبئی کے لئے روہت کتنے اہم کھلاڑی ہیں اس کا اندازہ اسی بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ جن تین میچوں میں ان کا بلّا چلا ہے ان میں ممبئی کو جیت حاصل ہوئی ہے ۔روہت نے خود کو فنشر کے رول میں ڈھال لیا ہے کہ انہیں میچ ختم کرنا ہے ۔ روہت کو اپنی اس کارکردگی کو مزید پانچ میچوں میں دہرانا ہوگا تاکہ ان کی ٹیم چوتھی بار خطاب جیتنے کی راہ پر گامزن رہے ۔کولکاتابھی اس مقابلے میں جیت کے ساتھ اتر رہی ہے ۔ اس نے اپنے گزشتہ مقابلے میں انڈر۔ 19 عالمی کپ کی ہندوستانی ٹیم کے نوجوان اسٹار شبھمن گل کی ناٹ آؤٹ 57 رن کی زبردست اننگز، کپتان دنیش کارتک کے ناٹ آؤٹ45؍اور سنیل نارائن کے 20 ؍رن پر دو وکٹ اور 32؍ رن کے بہترین کھیل کی بدولت چینئی سوپر کنگز کو 14 گیندیں باقی رہتے 6؍ وکٹ سے ہرایا تھا۔کولکتہ نے جس طرح 14؍گیندیں باقی رہتے ہوئے میچ ختم کیا تھا وہ قابل دید تھا۔ چینئی نے حالانکہ177؍رن بنائے تھے لیکن 18 سالہ نوجوان بلے باز گل نے اپنا پہلا آئی پی ایل ٹی۔20؍میں نصف سنچری بناتے ہوئے ٹیم کو جیت دلائی تھی۔ گل نے کپتان کارتک کے ساتھ پانچویں وکٹ کے لئے 83 ؍رنوں کی میچ فاتح شراکت داری کی۔کولکتہ نے جس انداز میں چینئی کو شکست دی تھی اس سے ممبئی کو کافی محتاط رہنے کی ضرورت ہے ۔ ممبئی اور کولکتہ کا مقابلہ کافی دلچسپ ہونے والا ہے اور اپنے اپنے پچھلے میچوں میں جیت حاصل کرنے کے بعد اتر رہی دونوں ٹیموں میں زبردست مقابلہ ہونے کی امید ہے ۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

وزیر کھیل راٹھور سے ملے لکشے سین –

نئی دہلی، جونیئر ایشیائی بیڈمنٹن چمپئن شپ میں 53 سال کے طویل وقفے کے بعد …

جواب دیں

%d bloggers like this: