سرورق / خبریں / کٹھوا عصمت دری معاملہ : وکلا کے رویہ پر نوٹس لے سکتا ہے سپریم کورٹ

کٹھوا عصمت دری معاملہ : وکلا کے رویہ پر نوٹس لے سکتا ہے سپریم کورٹ

نئی دہلی، سپریم کورٹ نے کٹھوا عصمت دری کیس میں وکلا کے رویہ پر نوٹس لینے کی حامی تو بھری، بشرطیکہ اس سلسلہ میں کوئی درخواست دائر کی جاتی ہے۔ کچھ وکلا کی جانب سے وکیل پی وی دنیش نے چیف جسٹس دیپک مشرا کی صدارت والی بنچ کے سامنے جموں و کشمیر کے کٹھوا میں آٹھ سال بچی آصفہ بانو کے ساتھ عصمت دری اور اس کے بعد اس کا قتل کئے جانے کی معاملہ میں وکلا کے طرز عمل کا خاص ذکر کیا اور اس سلسلہ میں اس سے از خود نوٹس لینے کا مطالبہ کیا۔
مسٹر دنیش نے دلیل دی کہ جموں کے وکیل کٹھوا عصمت دری معاملہ میں قانونی عمل میں رکاوٹ پیداکررہے ہیں اور اس کا نوٹس لیا جانا چاہئے۔ اس پر جسٹس مشرا نے کہا’’ہمارے پاس اس سلسلہ میں کچھ بھی نہیں ہے. کچھ تو ریکارڈ پر لایئے‘‘۔ تب مسٹر دنیش نے پھر سے کہا’’ہم نہیں چاہتے کہ اسے ’پبلسٹی‘ انٹریسٹ لیٹی گیشن کے طور پر دیکھا جائے۔ ہمارا نام عدالتی ریکارڈ کا حصہ نہ بنے‘‘۔ اس کے بعد عدالت نے زور دیتے ہوئے کہا کہ اس معاملہ میں مداخلت کے لئے کچھ نہ کچھ عدالت کے ریکارڈ پر لانا ہی ہوگا۔ ایسے امکان ہیں کہ یہ وکلا آج ہی عرضی دائر کریں گے۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: