سرورق / خبریں / کوکن کے پُرفضاء خطہ میں ننارریفائنری منصوبہ کی اجازت نہیں دیں گے:اُدھوٹھاکرے

کوکن کے پُرفضاء خطہ میں ننارریفائنری منصوبہ کی اجازت نہیں دیں گے:اُدھوٹھاکرے

ممبئی، کوکن کے پُرفضاء خطہ میں ننارریفائنری منصوبے کی اجازت نہیں دی جائے گی اور ریاستی فڑنویس حکومت نے گجراتیوں کی ذریعے کوکن میں زمین خریدی ہے ،اس لیے کوکن پر یہ بوجھ لادنے کی کوشش کی جارہی ہے۔لیکن کوکن کی مقدس زمین پرمنصوبہ پر عمل نہیں کیا جائیگا،اور جنہیں منصوبہ چاہئے وہ اسے ودربھ لے جائیں ۔بی جے پی حکومت کو چلینج کرتے ہوئے اس طرح کا بیان شیوسینا کے سربرہ ادھوٹھاکرے نے ننار دورے کے دوران دیا ہے۔
ادھوٹھاکرے نے ننار علاقہ میں پروجیکٹ کے مقام پر ہونے والے ایک جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے بی جے پی کو نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ ایسا دعویٰ کیا گیا تھا کہ ننار کے معاملہ میں کوئی بدعنوانی نہیں ہوگی ،لیکن زمین کی خرید وفروخت میں بدعنوانی ہوئی اور بیرونی لوگوں کو بچی گئی ہے۔جوکہ زمین مافیا کا گھوٹالہ کہا جاسکتا ہے۔انہوں نے بدعنوانی کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ مراٹھی اور کوکنیوں کے سرپر گجراتیوں کو بیٹھنے نہیں دیا جائے گا ۔اور ایک انچ زمین نہیں دی جائے گی ۔
ادھوٹھاکرے نے وزیراعظم نریندرمودی اور بی جے پی صدرامت شاہ کو سخت لہجہ میں جواب دیا کہ ہمیں حب الوطنی کا درس نہ دیں۔کوکن میں ہر ایک گھر میں ایک فوجی ہے ۔ انہوں نے بی جے پی لیڈرشپ کو یچیلنج کیا کہ ہمت ہے کہ اس علاقہ میں ایک جلسہ منعقد کرکے دکھائیں۔اقتدار میں رہنے کے باوجود ہم بے ایمان نہیں ہوئے ہیں اور ہم عوام کے ساتھ رہیں گے اور ان کی خواہشات کے مطابق کا م رکیں گے۔ دریں اثناء شیوسینا کوٹہ کے ریاستی وزیر سبھاش ڈیسائی نے اعلان کیا ہے کہ ننار علاقہ میں پروجیکٹ کے لیے ایکوائر کی گئی زمین کے لیے جاری آرڈننس رد کردیا گیا ہے۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: