سرورق / خبریں / کمارسوامی کی حلف برداری تقریب میں الگ تھلگ نظر آئے اروند کیجریوال –

کمارسوامی کی حلف برداری تقریب میں الگ تھلگ نظر آئے اروند کیجریوال –

بنگلور، بدھ کو ایچ ڈی کمارسوامی کی حلف برداری تقریب میں تمام اپوزیشن جماعتیں ایک اسٹیج پر متحد نظر آئیں۔ مایاوتی اور سونیا گاندھی کی گلے ملتی ہوئیں تصویریں تو ٹی وی اسکرین اور سوشل میڈیا پر چھا گئیں۔ کبھی مایاوتی کے کٹر مخالف رہے اکھلیش یادو بھی ان کے ساتھ کھڑے ہو کر مسکراتے ہوئے نظر آئے۔ لیکن ان سب کے بیچ اروند کیجریوال وہاں موجود رہتے ہوئے بھی کہیں الگ تھلگ نظر آئے۔
اپوزیشن پارٹیوں کے بی جے پی کے خلاف متحد ہونے کی اس پوری مہم میں ویسے بھی اروند کیجریوال نام کم ہی سننے میں آیا۔ لیکن پچھلے ہفتے ایچ ڈی کمارسوامی نے ان کو حلف برداری کی تقریب میں شامل ہونے کے لئے فون کیا تھا۔
یہ دوسری بار ہے جب وہ جنوبی ہندوستان گئے ہیں۔ فروری میں پہلی بار وہ اپنے دوست کمل ہاسن کی پارٹی ‘مککل ندھی میم’ کے قیام کے وقت گئے تھے۔ ایسا لگ رہا تھا کہ ان کی واحد دوست ممتا بنرجی ہی تھیں۔ وہ تھوڑی دیر کے لئے کیمرے کے سامنے آ ئے اور پھر چلے گئے۔ جب مایاوتی، اکھلیش اور راہل گاندھی ایک ساتھ اسٹیج پر آئے تو وہ ان کے ساتھ نہیں تھے۔
حالانکہ عام آدمی پارٹی نے منگل کو رسمی طور پر اعلان کیا ہے کہ وہ اترپردیش کے آئندہ کیرانہ اور نورپور اسمبلی ضمنی انتخابات میں مشترکہ اپوزیشن پارٹیوں کا ساتھ دے گی۔ گزشتہ سال بھی عام آدمی پارٹی نے یہی کیا تھا جب 2017 کے صدارتی انتخابات میں بی جے پی کی اپوزیشن امیدوار میرا کمار کی حمایت اس نے کی تھی۔

 

Leave a comment

About saheem

Check Also

بھونگیر حادثہ۔تلنگانہ کے وزیراعلی کا اظہار افسوس

حیدرآبادتلنگانہ کے وزیراعلی کے چندرشیکھر راو نے ضلع یادادری بھونگیر میں پیش آئے سڑک حادثہ …

جواب دیں

%d bloggers like this: