سرورق / خبریں / کشمیر مراعات یا مفادات کا مسئلہ نہیں بلکہ ایک انسانی مسئلہ ہے: میرواعظ عمر فاروق

کشمیر مراعات یا مفادات کا مسئلہ نہیں بلکہ ایک انسانی مسئلہ ہے: میرواعظ عمر فاروق

سری نگر ،  (یو ا ین آئی) حریت کانفرنس (ع) کے چیئرمین میرواعظ مولوی عمر فاروق نے کہا کہ مسئلہ کشمیرکوئی مراعات یا مفادات کا مسئلہ نہیں بلکہ ایک انسانی اور سیاسی مسئلہ ہے جس کے ساتھ یہاں کے عوام کی خواہشات و احساسات وابستہ ہیں اور ہمارا یہ بنیادی موقف ہے کہ اس مسئلہ کو فوجی طاقت سے عبارت اپروچ سے ختم نہیں کیا جاسکتا بلکہ اس مسئلے کو یا تو اقوام متحدہ کی قراردادوں پر عمل آوری اور یاپھر مسئلہ سے جڑے فریقین بھارت ، پاکستان اور کشمیر عوام کے مابین ایک بامعنی اور نتیجہ خیر مذاکراتی عمل کے ذریعے ہی حل کیا جاسکتا ہے۔ میرواعظ نے ان باتوں کا اظہار جمعرات کو یہاں حریت صدر دفتر پر منعقدہ ایک سمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔
انہوں نے رمضان سیز فائز کا براہ راست تذکرہ کئے بغیر کہا کہ کشمیر کے بارے میں کوئی بھی پہل تب تک ثمر آور ثابت نہیں ہوسکتی جب تک کشمیر کے بنیادی مسئلہ کو ایڈرس کرنے کے لئے اقدامات نہیں اٹھائے جاتے ہیں۔ انہوں نے سوالیہ انداز میں کہا’ کیا ایک مہینے کے بعد کشمیریوں کو قتل کرنے کا سلسلہ پھر شروع کیا جائے گا؟ ‘۔
میرواعظ نے کہا کہ کشمیر ی عوام عالمی سطح پر تسلیم شدہ بنیادی حق یعنی حق خود ارادیت کے لئے جدو جہد کررہے ہیں۔ جموں وکشمیر لبریشن فرنٹ (جے کے ایل ایف) چیئرمین محمد یاسین ملک نے اپنے خطاب میں کہا کہ ایسا لگتا ہے کہ حکومت ہندوستان کی یہ پالیسی ہے کہ کشمیری عوام پر بے تحاشہ تشدد اور مظالم ڈھا کر ان کو تحریک دستبردار کیا جائے اور آپریشن آل آوٹ اسی سلسلے کی ایک کھڑی ہے تاہم یہاں کی مزاحمتی سیاسی قیادت اور عوام جس ہمت اور حوصلے کے ساتھ حکومتی عزائم کی مزاحمت کررہے ہیں وہ اس بات کا ثبوت ہے کہ کشمیری عوام کو طاقت کے بل پر زیر نہیں کیا جاسکتا۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: