سرورق / خبریں / کرناٹک کے عوام نے تینوں پارٹیوں کو خوش کردیا…

کرناٹک کے عوام نے تینوں پارٹیوں کو خوش کردیا…

میسور۔تمام ہنگامی حالات کا سامنا کرنے کے بعد کرناٹک کی سیاست ایک اطمینان بخش مرحلہ تک پہنچ گئی ہے ۔ ایڈی یورپا نے استعفیٰ دے دیا ، جے ڈی ایس اور کانگریس کی مخلوط حکومت کا بننا تقریباًطے ہے۔ 55؍گھنٹے کے وزیراعلیٰ بی ایس ایڈی یورپا نے آج گورنر کو اپنا استعفیٰ دے دیا۔ بروز پیر مخلوط حکومت کرناٹک میں برسراقتدار آئے گی۔ کسی بھی پارٹی کو اکثر یت میں نہ لاتے ہوئے کرناٹک کے عوام نے اسمبلی کو معلق بنادیا تھا۔ معلق اسمبلی بناکر کرناٹک کے عوام نے تمام سیاسی پارٹیوں کو خوش کردیا۔ انتخابی تشہیری مہم کے دوران جس جس پارٹی نے ریاستی عوام سے جو جو مطالبہ کیا عوام نے پورا کردیا۔ بی جے پی نے نعرہ لگایا کہ سرکار بدلی جائے اور بی جے پی کو برسراقتدار لایا جائے۔ نریندر مودی جہاں جہاں گئے وہاں سرکار بدلنے اور بی جے پی کو برسراقتدار لانے کی التماس کی۔ ان کی با ت کا بھرم رکھتے ہوئے عوام نے سب سے زیادہ سیٹیں دیتے ہوئے بی جے پی کو جتا دیا۔ ایڈی یورپا کی وزیراعلیٰ بننے کی خواہش بھی مکمل کی گئی ۔ ایڈی یورپا کا دیرینہ خواب تھا کہ وزیراعلیٰ بنیں ، ووٹنگ سے قبل ہی انہوں نے حلف برداری کی تاریخ اور مقام بھی طے کردی۔ اسی کے مطابق ایڈی یورپا وزیراعلیٰ بنے اس طرح عوام نے ان کی خواہش کا احترام کیا۔ جے ڈی ایس کے ریاستی صدر کمارسوامی نے عوام سے مطالبہ کیا تھا کہ ایک مرتبہ مجھے بھی برسراقتداردلائیے ، تشہیری مہم کے دوران انہو ں نے صرف ایک مرتبہ اقتدار پر لانے کا مطالبہ کیا۔ اب پیر کے دن ریاستی عوام کمارسوامی کو ان کے مطالبہ کے تحت وزیراعلیٰ بنانے جارہے ہیں اس طرح دیوے گوڈا کی خواہش بھی مکمل ہوگئی ۔انتخابی تشہیر ی مہم کے دوران کانگریس نے عوام سے اصرار کرتے ہوئے مطالبہ کیا تھا کہ ریاست کو فرقہ پرست پارٹی سے دور رکھا جائے۔ کرناٹک کو بی جے پی سے مکت کیا جائے۔ کانگریس کے مطالبہ پر عوام نے ریاست میں بی جے پی کو اقتدار سے دور کیا اور فرقہ پرست پارٹی سے کرناٹک کو بچا لیا ۔ مودی نے کہا تھا کہ سدارامیا کو شکست دی جائے۔ مودی کے اس مطالبہ پر عوام نے سابق وزیراعلیٰ سدارامیا کو چامنڈیشوری اسمبلی حلقہ میں شکست سے دوچار کیا۔ اور سدارامیا نے مطالبہ کیا تھا کہ جیت کے ساتھ مجھے انتخابی سیاست کو وداع کریں ۔ عوام نے بادامی میں سدارامیا کو جیت دلائی۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: