سرورق / خبریں / کرناٹک اسمبلی انتخابات : پہلے تین گھنٹے میں 10سے 15 فیصد ووٹنگ، مودی نے بڑی تعداد میں ووٹ ڈالنے کی اپیل کی

کرناٹک اسمبلی انتخابات : پہلے تین گھنٹے میں 10سے 15 فیصد ووٹنگ، مودی نے بڑی تعداد میں ووٹ ڈالنے کی اپیل کی

بنگالورو، کرناٹک اسمبلی انتخابات کے لئے آج جاری ووٹنگ میں ابتدائی تین گھنٹے میں دس سے 15 فیصد ووٹنگ ہوئی۔ ریاست میں اسمبلی کی 224 میں سے 222 نشستوں کے لئے سخت سیکورٹی انتظامات کے درمیان صبح سات بجے سے پرامن طریقے سے پولنگ جاری ہے۔ ابتدائی رپورٹوں میں دیہی علاقوں میں پولنگ مراکز میں لوگوں کی بھاری بھیڑ دیکھی گئی ہے جبکہ شہری علاقوں میں لوگوں میں ووٹنگ کے تئیں اتنا جوش و خروش دیکھنے کو نہیں ملا ہے۔ الیکشن افسر کی جانب سے ملنے والی اطلاعات کے مطابق ساحلی علاقے کے اڈوپي ضلع میں صبح نو بج کر 30 منٹ پر 15 فیصد پولنگ ہوئی جبکہ ’دكاسهنا‘ ضلع میں 16 فیصد ووٹ پڑے۔ اس کے علاوہ دیگر علاقوں میں 13 سے دس فیصد ووٹ پڑے۔شہری علاقوں میں نو فیصد ووٹنگ ہوئی۔ اس انتخاب میں ریاست کے تقریبا پانچ کروڑ ووٹر 2622 امیدواروں کے سیاسی مستقبل کا فیصلہ کریں گے۔ ریاست میں حکمراں کانگریس پارٹی 220 سیٹوں پر جبکہ اہم اپوزیشن پارٹی بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) 222 سیٹوں پر انتخاب لڑ رہی ہے۔ گزشتہ کئی انتخابات میں’کنگ میکر‘ کارول ادا کرنے والی جنتا دل (سیکولر) نے 199 سیٹوں پر اپنے امیدوار انتخابی میدان میں اتارے ہیں۔ اس الیکشن میں جنتا دل (سیکولر) کی اتحادی بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی) 18 سیٹوں پر انتخاب لڑ رہی ہے۔ انتخابات میں وزیر اعلی سدارميا، بی جے پی ریاستی صدر اور سابق وزیر اعلی بی ایس یدی یورپا اور جنتا دل (سیکولر) کے رہنما ایچ ڈی كمارسوامي سمیت ریاست کے کئی اہم لیڈر انتخابی میدان میں ہیں جن کے سیاسی مستقبل کا فیصلہ ہونا ہے۔ پولنگ شام چھ بجے تک ہوگی۔ ووٹوں کی گنتی 15 مئی کو ہوگی۔
وزیر اعظم نریندر مودی نے ٹوئیٹر کے ذریعے کرناٹک کی عوام سے ریاستی اسمبلی کے لئے ہو رہے انتخابات میں بڑی تعداد میں ووٹ ڈالنے کی اپیل کی ہے ۔ مسٹر مودی نے اپنی ٹویٹ میں کہا ’’میں کرناٹک کی میری بہنوں اور بھائیوں سے آج بڑی تعداد میں ووٹ ڈالنے کی اپیل کرتا ہوں‘‘۔ انہوں نے اپنے ٹوئیٹ میں کہا ’’میں خاص طور پر نوجوان ووٹروں سے اپیل کرتا ہوں کہ وہ ووٹ دے کر اپنی شراکت کے ساتھ جمہوریت کے اس تہوار کو بہتر بنائیں‘‘َ

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: