سرورق / خبریں / کانگریس کا بی جے پی پر سرجیکل اسٹرائیک کا سیاسی فائدہ اٹھانے کا الزام –

کانگریس کا بی جے پی پر سرجیکل اسٹرائیک کا سیاسی فائدہ اٹھانے کا الزام –

دہلی، کانگریس نے وزیر اعظم کے دفتر پر حکمت عملی کے تحت سرجیکل اسٹرائیک کا ويڈيو جاری کرنے کا الزام لگاتے ہوئے آج الزام لگایا کہ بھارتیہ جنتا پارٹی کی حکومت سرجیکل اسٹرائیک کی روایت اور حقائق کو توڑ کر اس کا سیاسی اور انتخابی فائدہ لینے کی کوشش کر رہی ہے۔کانگریس کے رنديپ سنگھ سرجےوالا نے آج یہاں نامہ نگاروں سے کہا کہ مودی حکومت ’جے جوان جے کسان’ کے نعرے کا سیاسی استعمال کر رہی ہے اور سرجیکل اسٹرائیک کی جانبازی کی کہانی کے سہارے ووٹ حاصل کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا فوج کی اس کارروائی کا انتخابی فائدہ لینے کا اعلان بی جے پی صدر امت شاہ نے پہلے ہی کر دیا تھا۔بی جے پی کی یہ کوشش شرمناک ہے اور روایت کو توڑنے والا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی کو یاد رکھنا چاہئے کہ فوجیوں کی قربانی کا سیاسی فائدہ نہیں لیا جانا چاہئے لیکن وہ مسلسل ایسا کرنے کی کوشش کر رہی ہے اور اس سلسلہ میں اس نے اتر پردیش انتخابات کے دوران پریس كانفرنس، اشتہارات، تصویر اور هورڈنگس کے ذریعےسرجیکل اسٹرائیک کا کریڈٹ فوج کے بجائے وزیر اعظم نریندر مودی اور بی جے پی کو دیا۔
کانگریس کے ترجمان نے کہا کہ مودی حکومت فوجیوں کی قربانی اور سرجیکل اسٹرائیک کا فائدہ لینے کے لئے ہر ہتھکنڈہ اپنا رہی ہے لیکن پاکستان ا سپانسر دہشت گردی کو روكنے کے لئے ان کے پاس کوئی پالیسی نہیں ہے، اسی کا نتیجہ ہے کہ ستمبر 2016 کے سرجیکل اسٹرائیک کے بعد ہندوستانی فوج کے 146 جوان شہید ہوئے ہیں اور پاکستان نے 1600 سے زیادہ مرتبہ کنٹرول لائن کی خلاف ورزی کی اور 79 دہشت گردانہ حملوں کو انجام دیا۔
انہوں نے مودی حکومت پر فوج کو لے کر ڈبل پالیسی اختیار کرنے اور کھوکھلی باتیں کرنے کا الزام لگاتے ہوئے کہا کہ اس حکومت نے مسلسل دفاعی بجٹ کو کم کیا ہے اور رواں مالی سال میں اسے 1962 کے دفاعی بجٹ سے بھی کم کر دیا ہے جس سے سیکورٹی فورسز کو دشمن کا مقابلہ کرنے کے لئے جدید ہتھیار فراہم کرنے میں دقتیں آ رہی ہے اور ملک کی سلامتی کا بنیادی ڈھانچہ خطرے میں پڑتا دکھائی دے رہا ہے۔ ترجمان نے کہا کہ کانگریس کی حکومت میں کئی بار سرجیکل اسٹرائیک ہوئے ہیں اور گزشتہ سرجیکل اسٹرائیک کا بھی اس وقت کے کانگریس صدر سونیا گاندھی اور نائب صدر راہل گاندھی نے بھی اس کی حمایت کرتے ہوئے کہا تھا کہ دہشت گردوں کے منصوبوں کو نیست و نابود کرنے کے لئے اٹھائے گئے اقدامات کا پارٹی مکمل حمایت کرتی ہے۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: