سرورق / خبریں / کانگریس پارٹی سے مجھے کوئی بیزارگی نہیں: کمار سوامی

کانگریس پارٹی سے مجھے کوئی بیزارگی نہیں: کمار سوامی

رام نگرم: مجھے کانگریس پارٹی کی طرف سے کوئی الجھن نہیں ہے اور نہ ہی کوئی بیزارگی ہے جو مجھے آنسو بہانے پر مجبور کرے۔ بلکہ میرے آنسو اس لئے بہہ رہے ہیں کہ میری حکومت کے قائم ہوتے ہی عوام کے مفادات کی حفاظت کیلئے اقدامات کئے گئے۔ سماج کی فلاح وبہبود کے لئے انتہائی موثر کوشش کی گئیں اس کے باوجود عوام سے مجھے تعاون نہیں مل رہا ہے۔ یہ وضاحت وزیر اعلیٰ کمار سوامی نے کی۔ انہوں نے یہاں اخباری نمائندوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ معاشی بحران کے درمیان بھی 40 ہزار کروڑ روپئے کے قرض معاف کئے گئے ہیں۔ اس کے علاوہ وہ عوامی و فلاحی منصوبے جاری کئے گئے ہیں۔ مجھے پر کسی بھی کانگریس لیڈر کا دباؤ نہیں ہے۔ اے آئی سی سی صدر راہل گاندھی اور کانگریس کے ریاستی لیڈروں کا مکمل تعاون حاصل ہے۔ میرے بیانوں کو میڈیا توڑ مروڑ کر پیش کررہا ہے۔ عوام کی خدمت کیلئے کانگریس کے ساتھ مل کر مخلوط حکومت تشکیل دی گئی ہے۔ یہ بھگوان کی طرف سے دیا گیا موقع ہے جب تک بھگوان کا آشیرواد ہمارے ساتھ رہے گا حکومت آگے بڑھے گی۔ مرکزی وزیر ارون جیٹلی کی طرف سے کئے گئے ریمارک کے بارے میں اپنا رد عمل ظاہر کرتے ہوئے کمارسوامی نے کہا کہ میں جیسا بھی لیڈر ہوں ریاست کو بچانے کا کام کررہا ہوں۔ اقتدار پر آنے کے ایک ماہ کے اندر کسانوں کا قرض معاف کیا ہے مگر عظیم لیڈر نے ملک کے عوام کیلئے کیا کیا ہے۔؟کمار سوامی نے مزید کہا کہ 13سال قبل جے ڈی ایس حکومت کی تشکیل کیلئے حمایت کرنے والے بی جے پی لیڈروں نے صرف 2ماہ میں ہی 150 کروڑ روپئے کے غبن کا الزام لگا کر مجھے بد نام کرنے کی کوشش کی تھی۔ انہوں نے کہا کہ نافہ کی قیمت میں گراوٹ کے پیش نظر فی کلو نافہ کیلئے 30روپئے اور بائی ولینٹن کیلئے 50 روپئے تائیدی رقم دینے کے بارے میں غور کیا جارہا ہے۔ اس سلسلے میں بہت جلد قیمتی فیصلہ کیا جائے گا۔ فی کلو نافہ کیلئے 280روپئے اور بائی ولیٹن کیلئے 325 روپئے تائیدی رقم دئے جانے بسوا راجو کمیٹی نے حکومت کو سفارش کی ہے اس کے تحت اگر رقم جاری کی گئی تو حکومت پر روزانہ تقریباً 50لاکھ روپئے کا خرچ بڑھ جائے گا۔ کم سے کم تین مہینے بھی اگر تائیدی رقم دی گئی تو 7080 کروڑ روپئے درکار ہیں۔ جبکہ فی الحال محکمہ فائنانس کی پوزیشن اتنی بڑی رقم خرچ کرنے کی نہیں ہے۔ اس لئے تائیدی رقم کیلئے 2530 کروڑ روپئے کی رقم جاری کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔ کمار سوامی نے اس دوران رام نگرم میں تعمیر کئے جارہی راجیو گاندھی ہیلتھ یونیورسٹی کے کیمپس کیلئے زمین فراہم کئے ہوئے مستحقین کے ساتھ اجلاس میں حصہ لیا۔ اس اجلاس میں ریاستی وزراء ڈی کے شیوکمار، ایچ ڈی ریونا بھی موجود تھے۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: