سرورق / بین اقوامی / چین میں مودی کا پرجوش خیر مقدم، شی جن پنگ سے خیر رسمی بات چیت –

چین میں مودی کا پرجوش خیر مقدم، شی جن پنگ سے خیر رسمی بات چیت –

ووہان: وزیراعظم نریندر مودی اور چین کے صدر شی جن پنگ کے درمیان وہ غیر رسمی بات چیت آج اس خوبصورت چینی شہر میں شروع ہوگئی جس کا کافی دنوں سے انتظار تھا۔
دونوں رہنمایان نے بالمشافہ ملاقات میں باہمی تعلقات کو بہتر بنانے کے رخ پر تبادلہ خیال کیا۔ امور خارجہ کے ترجمان رویش کمار نے ٹوئٹ کیا ہے کہ یہ غیر رسمی بات چیت چین کے اس حسین مناظر سے مزین شہر میں شرو ع ہوچکی ہے جس میں دونوں رہنمایان ہند ۔ چین باہمی تعلقات کا مصحلت پسندانہ اور طویل مدتی تناظر میں جائزہ لیں گے۔
وزیراعظم مودی کا صدر چین نے پرجوش خیر مقدم کیا اور اس موقع پر ایک ثقافتی تقریب میں منعقد کی گئی۔ دونوں ملکوں کے درمیان ثقافتی تعلقات صدیوں پرانے ہیں۔ حالیہ دنوں میں بالی ووڈ کی فلموں اور یوگا نے چین میں خاصی مقبولیت حاصل کی ہے۔
دونوں ملکوں کے درمیان باہمی تعلقات ڈوکلام تعطل کے نتیجے میں متاثر بھی ہوئے۔ یہ تعطل دو ماہ تک جارہ رہا۔
مسٹرمودی نے چین روانہ ہونے سے قبل اپنے بیان میں کہا تھا کہ صدر شی اور وہ باہمی دلچسپی کے دوطرفہ امورپر بات چیت کریں گے۔ ہم قومی ترقی کے لئے اولین ترجیحات اور خاص طور سے حال اور مستقبل کی بین الاقوامی صورت حال کے بارے میں بات چیت کریں گے اور سیاسی طور سے ہند۔چین تعلقات میں پیش رفت کا بھی جائزہ لیں گے۔
سرکاری افسران نے بتایا کہ اس چوٹی تقریب کے لئے مسٹر مودی کے دورے کے مدنظر میوزیم کو بند کردیا گیا ہے۔ میوزیم کے مین گیٹ پر ایک پیغام چسپا ں کرکے عوام الناس کو اطلاع دی گئی ہے کہ مشینری کی رکھ رکھاؤ کی وجہ سے میوزیم کو چار دنوں کے لئے بند کیا گیا ہے۔ میوزیم کی سیڑھیوں پر سرخ قالین بچھائے گئے ہیں۔
چین کے برسراقتدار کمیونسٹ پارٹی کی ترجمان اخبار پیپلز ڈیلی نے آج اپنی رپورٹ میں بتایا کہ چین اور ہندوستان دونوں ممالک کی ثقافتی تہذیب ایک ہے۔ جس مقام پر دونوں ممالک کے رہنمایان کی ملاقات ہورہی ہے، سال 2014 میں اسی میوزیم میں ہندوستان پر ایک خاص پروگرام منعقد کی گئی تھی۔
اخبار نے اپنی رپورٹ میں مزید بتایا کہ ’’چین اور ہندوستان کے درمیان دوستانہ آمدورفت نے ساری دنیا کے لئے ثقافتی طور سے ایک مثال قائم کی ہے۔‘‘

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: