سرورق / خبریں / چھتیس گڑھ میں راجیہ سبھا کی ایک سیٹ کے لئے پولنگ جاری-

چھتیس گڑھ میں راجیہ سبھا کی ایک سیٹ کے لئے پولنگ جاری-

رائے پور، چھتیس گڑھ سے راجیہ سبھا کی ایک سیٹ کے لئے پولنگ جاری ہے۔ بی جے پی اور کانگریس امیدواروں کے مابین اس سیٹ کیلئے راست مقابلہ ہے۔ اسمبلی کے احاطہ میں صبح نو بجے پولنگ شروع ہوئی جو شام چار بجے تک چلے گی۔ ریاست میں جیت کے لئے 46ووٹوں کی ضرورت ہے۔ اسمبلی میں اعداد وشمار کے حساب سے بی جے پی کے امیدوار کی جیت طے ہے ۔
بی جے پی نے پارٹی کی قومی جنرل سکریٹری محترمہ سروج پانڈے اور کانگریس نے سابق رکن اسمبلی لیکھ رام ساہو کو امیدوار بنایا ہے۔ بی جے پی کے پاس 49اراکین اسمبلی ہیں جبکہ ایک آزاد امیدوار ومل چوپڑا نے بھی بی جے پی کو ووٹ دینے کا اعلان کررکھا ہے۔ کانگریس کے پاس 38اراکین اسمبلی ہیں ۔ غیرمتعلقہ رکن امت جوگی نے کانگریس کو ووٹ دینے کا اعلان کررکھا ہے۔ بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی ) کے ایک واحد رکن نے بھی کانگریس کو ووٹ دینے کا اعلان کیا ہے۔
وزیراعلی ڈاکٹر رامن سنگھ نے بی جے پی کے حق میں اس کے اس کے اراکین سے زیادہ تعداد میں ووٹ پڑنے کی امید ظاہر کی ہے۔ وہیں کانگریس قانون ساز پارٹی کے لیڈر ٹی ایس سنگھ دیو نے بھی دعوی کیا ہے کہ ایک مخصوص ذات کے رکن بی جے پی امیدوار سے اپنی توہین کا بدلہ لینے کے لئے کانگریس کو حمایت دیں گے۔ ان دعوں کے درمیان دونوں ہی جماعتیں اپنے ووٹروں کو متحد کررکھنے کی کوشش کررہی ہیں۔ دونوں ہی پارٹیوں نے وہپ بھی جاری کیا ہے۔
بی جے پی کے پولنگ ایجنٹ شیورتن شرما نے پولنگ کے دوران کانگریس کے رکن سمبلی انل بھیڑیا پراپنا ووٹ دکھانے کا الزام لگاتے ہوئے اعتراض درج کرایا ہے۔ وہیں انل بھیڑیا نے کہا کہ انہوں نے صرف ضابطہ کے مطابق اپنے ایجنٹ کو ہی ووٹ دکھا یا ہے۔ اسے انتخابی افسر نے زیر التوا رکھ لیا ہے۔ حالانکہ اس ووٹ کے منسوخ ہونے یا گنے جانے سے بھی نتیجہ میں کوئی تبدیلی آنے کی امید نہیں ہے۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: