سرورق / بین اقوامی / پوتن کا نیٹو کو انتباہ

پوتن کا نیٹو کو انتباہ

ماسکو،  (رائٹر) روس کے صدر ولادیمیر پوتن نے یوکرین اور جارجیا کے ساتھ قریبی تعلقات بنانے کے بارے میں نیٹو کو خبردار کیا ہے۔مسٹر پوتن نے جمعہ کو کہا کہ شمالی معاہدہ اوقیانوس (نیٹو) کی یہ پالیسی غیر ذمہ دارانہ ہے اور اس کے لئے انہیں سنگین نتائج کا سامنا کرنا پڑے گا۔مسٹر پوتن نے ماسکو میں دنیا بھر سے جمع ہوئے روسی سفارت کاروں سے خطاب کرتے ہوئےکہا کہ یورپ میں آپسی اعتماد کو دوبارہ بحال کرنے کی ضرورت ہے۔ مسٹر پوتن نے روسی سرحد کے قریب فوجی اڈوں کو قائم کرنے کے لئے نیٹو کی کوششوں کی سخت مخالفت کی ہے ۔مسٹر پوتن نے کہا کہ نیٹو کی طرف سے اس طرح کے جارحانہ اقدام روسی کے لئے ایک سنگین خطرہ ہے، جس کا ہم مناسب جواب دیں گے۔قابل ذکر ہے کہ یوکرین اور جارجیا دونوں ہی ممالک کی سرحد روس سے متصل ہے ۔ روس چاہتا ہے کہ دونوں ملک نیٹو میں شامل نہ ہوں۔ روس کا خیال ہے کہ نیٹو ایک یرغمال بنانے والی فوجی تنظیم ہے۔ نیٹو کے رکن ممالک کے رہنما یوکرین اور جارجیا کو اس تنظیم میں شامل کرنا چاہتے ہیں ۔روسی صدر نے کہا ہے کہ انہوں نے پیر کو فن لینڈ کے دارالحکومت ہلسنکی میں امریکی صدر ڈونالڈ ٹرمپ کے ساتھ سربراہ ملاقات کے دوران یہ معاملہ اٹھایا تھا۔امریکی صدر نے نیٹو کے رکن ممالک سے دفاعی بجٹ بڑھانے کی اپیل کی ہے ۔
واضح رہے کہ روس کی فوج نے 2008 میں دو جارجیائی علاقوں میں داخل ہونے کے بعد 2014 میں یوکرین کے کریمیا پر قبضہ کرلیا تھا جس کے بعد مشرقی یوکرین میں روسی حامی علیحدگی پسند بغاوت شروع ہوئی تھی ۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: