سرورق / خبریں / پریلا جوشی کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے –

پریلا جوشی کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے –

دھاروارڈ: معاشرہ و سماج میں امن و یکجہتی کی برقراری کے لئے تمام مذاہب و قوموں کو آگے آنا چاہئے۔ امن و یکجہتی کو درہم برہم کرنے والے بیان بازی سے گریز کرنا چاہئے۔ بی جے پی میں رکن پارلیمان پریلا جوشی کا بیان قابل مذمت ہے۔ انجمن اسلام کے صدر اسماعیل تماٹگار نے اخباری اعلامیہ کے ذریعہ بتایا کہ پریلاد جوشی کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے۔ جوشی بیمار ذہنیت کے بیان دینے لگے ہیں۔ حال ہی میں ہبلی کے قصبہ پیٹ میں ہوئے گروسدپا امبیگیر قتل کے معاملہ میں پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے ملزموں کو گرفتار کرلیا ہے۔ پولیس قانون کے مطابق اپنا کام کررہی ہے مگر اس بات کو سیاسی مسئلہ بناتے ہوئے سیاسی قائدین سماج کے امن و یکجہتی کو تار تار کرنے کی کوشش میں لگے ہوئے ہیں، پریلاد جوش نے ایک تقریب میں قصبہ پیت کو منی پاکستان کہتے ہوئے یہاں کے عوام کے دلوں کو دکھ پہنچایا ہے۔ اس سے پہلے ایک تقریب میں ایک مولوی نے گنیش پیٹ کو پاکستان کی مانند نظر آنے والا بیان دیا تھا۔ اس بیان پر ان کے خلاف ایک معاملہ درج ہوا تھا۔اس بیان کی انجمن اسلام سمیت تمام لوگوں نے مذمت کی تھی۔ گنیش پیٹ میں بیان دینے والے شخص کے خلاف جس طرح قانونی کارروائی کی گئی تھی اسی طرح رکن پارلیمان پریلاد جوشی کے خلاف بھی قانونی چارہ جوئی کی جائے۔ ضلع افسرز کو چاہئے کہ وہ پریلاد جوشی کے بیان کا نوٹس لیں۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: