سرورق / بین اقوامی / وشوبھارتی یونیورسٹی میں وزیر اعظم مودی اور بنگلہ دیشی وزیر اعظم شیخ حسینہ نے بنگلہ دیش بھون کا افتتاح کیا

وشوبھارتی یونیورسٹی میں وزیر اعظم مودی اور بنگلہ دیشی وزیر اعظم شیخ حسینہ نے بنگلہ دیش بھون کا افتتاح کیا

کلکتہ، اس دلیل کے ساتھ کہ ہندوستان اور بنگلہ دیش دو الگ ملک ہیں مگر دونوں ملکوں کے درمیان اشتراک و تعاون باہمی مثالی ہیں وزیر اعظم نریندر مودی نے کہا کہ ہندوستان اور بنگلہ دیش مل کر خطے کی خوشحالی کیلئے کام کررہے ہیں اور دونوں ملک کے عوام کیلئے ایک دوسرے سے بہت کچھ سیکھ سکتے ہیں ۔اس موقع پر وشوبھارتی یونیورسٹی میں وزیر اعظم مودی اور بنگلہ دیشی وزیر اعظم شیخ حسینہ نے بنگلہ دیش بھون کا افتتاح بھی کیا ۔ مغربی بنگا ل کے بیر بھوم ضلع کے بولپور کے شانتی نیکتن میں واقع وشوبھارتی یونیورسٹی کے 49ویں کنونشن جس میں بنگلہ دیش کی وزیر اعظم شیخ حسینہ، بنگال کے گورنر کیسری ناتھ ترپاٹھی اور وزیرا علیٰ ممتا بنرجی موجود تھیں سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم مودی نے کہا کہ ہندو بنگلہ دیش کے درمیان تہذیب و ثقافت میں یکسانیت ہیں ۔دونوں ممالک کے عوام کو ایک دوسرے سے بہت کچھ سیکھنے کے مواقع ہیں ۔
وزیر اعظم مودی نے کہا کہ وشوبھارتی یونیورسٹی میں خطاب کرنا ایک بڑے اعزاز کی بات ہے، ٹیگور کی سرزمین ہے ، ان کی شہرت اورعظمت سے پوری دنیا واقف ہے ۔وزیر اعظم نے طلباء نے کہا کہ آپ کی صلاحیت اور کام ہی سب سے بڑا سرٹیفکٹ ہے۔ وزیرا عظم مودی نے وشوبھارتی یونیورسٹی کے دیہی تعمیراتی پروگرا م کی تعریف کرتے ہوئے یونیورسٹی انتظامیہ کو مشورہ دیا کہ 2021تک 100بستیوں کو اپنے اسکیم کے تحت لائیں اور جدید سہولیات سے جوڑنے کیلئے اقدمات کریں ۔
وزیر اعظم نے کہا کہ میں نے اس سے قبل آپ کو 50گاؤں میں پروجیکٹ چلانے کو کہا تھا مگر میری امیدیں آپ سے بڑھ گئی ہیں ۔وزیرا عظم نے کہا کہ 2021میں وشوبھارتی یونیورسٹی کو 100سال مکمل ہوجائیں گے ۔اس لیے ہم آپ سے امید کرتے ہیں کہ آپ نے جو 50گاؤں میں کیا ہے وہ 2021تک 100یا پھر دو سو گاؤں میں کریں ۔ان تمام گاؤں میں ایل پی جی کنکشن ، خواتین اور بچوں کو وقت پر ٹیکہ اور گاؤں کو ڈیجٹیل سے جوڑیں ۔ اس سے قبل وشو بھارتی یونیورسٹی میں پینے کاصاف پانی کی سپلائی نہیں ہونے پر طلباء سے معافی مانگتے ہوئے وزیر اعظم نریندر مودی نے 49ویں کنونشن میں کہاکہ یونیورسٹی کا چانسلر ہونے کے ناطے ان کی ذمہ داری تھی کہ یونیورسٹی میں صاف پینے کا پانی فراہم کریں مگر وہ ایسا نہیں کرسکے اس کیلئے وہ طلباء سے معافی مانگتے ہیں ۔
وزیر اعظم مودی نے کہا کہ وشو بھارتی یونیورسٹی کا چانسلر ہونے کی حیثیت سے میں آپ سے معافی مانگتا ہوں کہ کچھ طلباء نے مہمانوں کے ذریعہ مجھ تک یہ بات پہنچائی ہے کہ یونیورسٹی میں پینے کا پانی کی سپلائی نہیں ہے ۔وزیر اعظم نے کہا کہ اس پریشانی کیلئے آپ سے معافی مانگتا ہوں ۔ وزیرا عظم کے اس بیان کا طلباء نے بہت ہی گرم جوشی سے خیر مقدم کیا ۔اس تقریب میں بنگلہ دیش کی وزیر اعظم شیخ حسینہ، بنگال کے گورنر کیسری ناتھ ترپاٹھی اور وزیرا علیٰ ممتا بنرجی بھی موجود تھے۔
شانتی نیکتن میں وزیرا علیٰ ممتا بنرجی نے بنگلہ دیش کی وزیر اعظم شیخ حسینہ اور وزیر اعظم مودی کا والہانہ خیرم مقدم کیا۔وزیر اعظم مودی فوج کے خصوصی ہیلی کاپٹر سے شانتی نیکتن پہنچے ہیں ۔پروٹوکول کے مطابق وزیر اعظم کا استقبال کرنے کیلئے ممتابنرجی موجود تھیں ۔ اس درمیان ایک واقعہ پیش آیا جو ہندوستانی جمہوریت کی خوبصورتی کو ظاہر کرتا ہے ’’ممتا بنرجی کے پہنچنے سے قبل ہی وزیراعظم کا ہیلی کاپٹر لینڈنگ کرگیا اور وزیراعظم اترکر اپنی گاڑی کی طرف بڑھنے لگے ۔دوسری طرف وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے جب دیکھا کہ وزیرا عظم اپنی گاڑی کی طرف بڑھ رہے ہیں تو ممتابنرجی تیزقدموں سے ان کی جانب چلنے لگی۔مگر اس راستے میں کیچڑ تھا وزیر اعظم نے دیکھا کہ ممتا بنرجی کو کیچڑ لگ سکتا ہے تو وزیر اعظم روک کر ممتا بنرجی کو دوسری طرف سے آنے کااشارہ کرنے لگے ۔ممتا بنرجی کے والہانہ استقبال سے نریندرمودی خوش نظرآئے۔دونوں لیڈروں کے درمیان تھوڑی دیر گفتگو ہونے کے بعد دونوں اپنی اپنی گاڑی میں بیٹھ گئے۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

بھونگیر حادثہ۔تلنگانہ کے وزیراعلی کا اظہار افسوس

حیدرآبادتلنگانہ کے وزیراعلی کے چندرشیکھر راو نے ضلع یادادری بھونگیر میں پیش آئے سڑک حادثہ …

جواب دیں

%d bloggers like this: