سرورق / خبریں / وزیراعظم پارلیمنٹ میں جواب دینے کی تیاری کریں : کانگریس

وزیراعظم پارلیمنٹ میں جواب دینے کی تیاری کریں : کانگریس

نئی دہلی،تین طلاق، آبپاشی، تعلیم اور دیگر ترقیاتی کاموں کے تعلق سے وزیراعظم نریندر مودی پر غلط بیانی کا الزام لگاتے ہوئے کانگریس نے آج کہاکہ انہیں پارلیمنٹ میں جواب دینے کی تیاری کرنی چاہئے۔
کانگریس کے سینئر ترجمان اور راجیہ سبھا میں پارٹی کے نائب لیڈر آنند شرما نے یہاں پارٹی ہیڈکوارٹر میں ایک پریس کانفرنس میں کہاکہ وزیراعظم ترقی مہم نہیں بلکہ 2019کی انتخابی تشہیر مہم چلا رہے ہیں۔ اس کے لئے وہ مسلسل غلط بیانی کرکے ملک کے عوام کو گمراہ کررہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ مسٹر مودی غلط بیانی کررہے ہیں اور یہ ذہنی صحت کی علامت نہیں ہے۔ یہ قومی تشویش کا موضوع ہونا چاہئے۔ وزیراعظم کی بات کی اہمیت ہوتی ہے اور اس کا اثر پڑتا ہے۔
پارلیمنٹ کے مانسو ن اجلاس کے تعلق سے انہوں نے کہاکہ کل اپوزیشن کے لیڈر میٹنگ کررہے ہیں جس میں پارلیمنٹ میں اٹھائے جانے امور طے کئے جائیں گے۔ انہوں نے کہاکہ ملک میں کسان خواتین، نوجوانوں اور قومی سلامتی سے وابستہ امور ہیں جن پر اپوزیشن بات چیت کرکے حکومت سے جواب مانگے گی۔
انہوں نے کہاکہ وزیراعظم نے ایک تقریر میں کانگریس پر تین طلاق سے متعلق ایکٹ کو روکنے کا الزام لگایاہے جو کہ پوری طرح غلط ہے۔ یہ ایکٹ راجیہ سبھا کی سلیکٹ کمیٹی کے پاس ہے۔ انہوں نے کہاکہ کانگریس تین طلاق کے خلاف ہے اور اس نے کبھی کسی قانون کی مخالفت نہیں کی ہے۔
مسٹر شرما نے کہاکہ وزیراعظم اپنی تقریروں میں مسلسل اپوزیشن خاص طورپر کانگریس پر غلط بیانی کررہے ہیں ۔ اس کے لئے انہیں پارلیمنٹ میں جواب دینا ہوگا اور ان کو اسکے لئے اپوزیشن اور عوام سے معافی بھی مانگنی چاہئے۔
مسٹر مودی پر سماج کو تقسیم کرنے کا الزام لگاتے ہوئے انہوں نے کہاکہ سماج کو تقسیم کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔ ہر الیکشن سے پہلے ایسی کوشش ہوتی ہے۔ کانگریس کو مسلم پارٹی بتانے کے مسٹر مودی کے بیان کو خارج کرتے ہوئے کانگریس کے ترجمان نے کہاکہ کانگریس پورے ہندستان اور ہندستانی لوگوں کی پارٹی ہے۔ یہ ہندستانی معاشرہ کی تکثیریت کا احترام کرتی ہے۔
انہوں نے کہاکہ کانگریس مسٹر مودی سے پارلیمنٹ کا مانسون اجلاس برباد نہیں کرنے کی اپیل کرتی ہے اور کسانوں، نوجوانوں، خواتین اور قومی سلامتی سے وابستہ امور پر بحث کرنے کا مطالبہ کرتی ہے۔
مسٹر شرما نے کہا کہ بھارتیہ جنتا پارٹی 2014میں کئے گئے انتخابی وعدوں کو پورا نہیں کرسکی ہے اس لئے اسے نئے وعدے نہیں کرنے چاہئیں اور پرانے وعدوں کا حسا ب دینا چاہئے۔
کانگریس کے لیڈرکہا کہ پانچ کروڑ لوگوں کے خط افلاس سے اوپر آنے کا وزیراعظم کا دعوی مضحکہ خیز ہے کیونکہ نوٹوں کی منسوخی اور غلط طریقہ سے جی ایس ٹی کے نفاذ سے لاکھوں صنعتیں بند ہوگئیں اور ملازمتیں ختم ہوگئیں۔ انہوں نے کہاکہ حقیقت میں 14کروڑ لوگ خط افلاس سے نیچے چلے گئے ہیں۔
کانگریس کے صدر راہل گاندھی کی مسلمان لیڈروں سے رازدارانہ ملاقات کرنے کی قیاس آرائیوں پر مسٹر شرما نے کہاکہ یہ ممکن نہیں ہے۔ یہ ایک گروپ ہے جو اس طرح کی غلط تشہیر کرتا ہے۔ اس سے پہلے سابق وزیراعظم منموہن سنگھ کے بارے میں بھی ایسی ہی افواہیں پھیلائی گئی ہیں۔ ڈاکٹر سنگھ اور مسٹر گاندھی کو خصوصی سیکورٹی حاصل ہے۔ جہاں ان سے ملاقات کرنے والوں کا پورا ریکارڈ رہتا ہے۔ اس لئے رازدارانہ ملاقات کی خبریں محض قیاس آرائی ہے۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: