سرورق / بین اقوامی / میانمار فوج کی وحشیانہ کارروائی میں روہنگیا آبادی والی بستیاں نیست و نابود

میانمار فوج کی وحشیانہ کارروائی میں روہنگیا آبادی والی بستیاں نیست و نابود

کٹاپلونگ (بنگلہ دیش)، 7 ستمبر (رائٹر) میانمار میں اپنا سب کچھ لٹا کر بنگلہ دیش میں پناہ لینے والے 20 روہنگیا مسلمانوں اور ہندوں نے بتایا کہ ان کے گاؤں میں سب سے پہلے فوجی جوانوں نے اندھادھند فائرنگ کی، اس کےبعد سپاہیوں کے ساتھ شہریوں نے بستی میں آگ زنی کی اور لوٹ پاٹ کرکے سب کچھ تباہ کردیا۔
بنگلہ دیش میں پناہ لینے والے 20 مسلمانوں اور ہندوؤں نے انٹرویو دیا، جس میں انہوں نے میانمار میں فوجی جوانوں اور بدھسٹ شہریوں کے ہاتھوں اپنے گاؤں کی تباہ کی کہانی سنائی۔
انہوں نے بتایا کہ کس طرح میانمار کے صوبہ راخین میں کھا ماؤنگ سیک گاؤں کو فوج نے گزشتہ 25 اگست کو اندھا دھند فائرنگ کی، جس کی وجہ سے وہ اپنے گاؤں چھوڑ کر بھاگنے پر مجبور ہوئے۔

 

Leave a comment

About Khamar Naz

Check Also

کیلی فورنیا میں آگ، ریاست کی تاریخ میں پانچویں خوفناک آتشزدگی –

لاس اینجلس، شمالی کیلی فورنیا کے جنگلوں میں لگی شدید آگ پر ابھی تک قابو …

جواب دیں

%d bloggers like this: