سرورق / خبریں / ممکنہ شکست سے بی جے پی خوف زدہ اسمبلی انتخابات کے ساتھ لوک سبھاالیکشن کراسکتاہے مرکز: مایاوتی

ممکنہ شکست سے بی جے پی خوف زدہ اسمبلی انتخابات کے ساتھ لوک سبھاالیکشن کراسکتاہے مرکز: مایاوتی

لکھنؤ: (یواین آئی)بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی )کی صدر مایاوتی نے وزیراعظم نریندرمودی پر ترقی کے نام پر لوگوں کو گمراہ کرنے کاالزام لگاتے ہوئے اندیشہ ظاہر کیاہے کہ انتخابات میں ممکنہ شکست کے خوف سے بی جے پی سال کے اواخر میں لوک سبھا انتخابات کے ساتھ ساتھ مدھیہ پردیش ،چھتیس گڑھ اور راجستھان اسمبلی انتخابات بھی کراسکتی ہے ۔محترمہ مایاوتی نے اتوارکو یہاں کہاکہ مسٹر مودی نے’وکاس‘کا گمراہ کرنے والا راگ چھوڑ کر ذات پات اور فرقہ واریت کو بڑھاوادینے کا حربہ اختیار کرنا شروع کردیاہے ۔اس سے عوام میں اس تصور کو تقویت ملی ہے کہ مسٹر مودی کی کم ہوتی مقبولیت سے بوکھلائی بی جے پی کافی مایوس ہے اور مدھیہ پردیش ،چھتیس گڑھ اور راجستھان اسمبلی کے ساتھ ہی لوک سبھا انتخابات بھی قبل ازوقت اس سال کے اواخرتک کراسکتی ہے ۔جموں کشمیر میں محبوبہ مفتی کی حکومت گراکر بی جے پی نے اس کا اشارہ پہلے ہی دے دیاہے ۔اعظم گڑھ اور مرزاپورمیں مسٹر مودی کی تقریرکو ’چناوی جگاڑ‘قراردیتے ہوئے انہوں نے کہاکہ کرناٹک میں سام ،دام ،دنڈ ،بھید ہرطرح کے ہتھکنڈے اختیار کرنے کے باوجود وہاں حکومت نہیں بننے کی وجہ سے بی جے پی کی اعلیٰ قیادت مایوسی میں مبتلاہے اور اچھی انتخابی حکمت عملی کے لئے میدان تیار کرنے کے لئے سرکاری سرپرستی میں ملک کو ذات پات ،فرقہ وارانہ کشیدگی اور تشددکی آگ میں جھونکنے کی مسلسل کوشش کررہی ہے ۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: