سرورق / خبریں / معروف اداکاره مینا کماری کو گوگل کے ڈوڈل پر خراج عقیدت پیش کیا گیا –

معروف اداکاره مینا کماری کو گوگل کے ڈوڈل پر خراج عقیدت پیش کیا گیا –

ممبئی مشهور اداکاره مینا کماری عرف مه جبیں کو ان کی۸۵ ویں سالگره کے موقع پر گوگل کے ڈوڈل پر خراج عقیدت پیش کیا گیا هے-جن کی گزشته 45 ویں برسی بھی منائی گئی هے. اور انهیں ان 46 سال میں جو مقام فلم انڈسٹری میں ملا،دوسری اداکاره وه جگه نهیں بنا پائی هے.
گوگل کے ڈوڈل پر مینا کماری کو ساڑی زیب تن کیے هوئے دکھا یا گیااور ان کے چهرے پر سنجیدگی چھائی هوئی ہے۔ ان کا اصلی نام مه جبیں تھا.یکم اگست 1932 کوپیدا هوئیں مینا. کماری کا شمار هندی فلم صنعت میں بهترین اداروں میں کیاجاتا هے،اپنے 30 ساله فلمی کرئیر میں انهوں 90سے زائد فلموں میں اداکاره کے جوهردکھائے. انهیں هندی فلموں کی ملکه جذبات کها جاتا هے. ان کی فلموں کو کلاسیک فلموں کا درجه دیا جاچکا هے.
میناکماری شاعری بھی کرتی تھیں اورایک مشاعره میں فرق گورکھپوری نے ایک بار مشاعره چھوڑدیا تھا کیونکه انهوں ڈائس پر میناکماری کو برداشت نهیں کیا ،ان کا کهنا تھا که مشاعرے صرف شاعروں کے لیے هے. یه واقعه 60_1959 کا هے ،فعاق کا اصلی نام رگھو پتی سهائے تھا. اس کا ﺫکر فرق کی سوانح عمری میں کیاگیا هے.دراصل میناکماری کے مشاعره میں آمد پرسامعین ان کی ایک جھلک دیکھنے کے لیے مشاعره گاه سے باهر نکل گئے۔
میناکماری نے ۴۰کی دهائی میں بچپن کے رول کرنے شروو کیے اور فلم کی هیروئن بن گئیں ،لیکن انهیں اصل کامیابی 1952 میں بیجورا باورا سے کامیابی حاصل هوئی اور انهیں بهترین اداکاره کا فلم فئیر ایوارڈ سے نوازا گیا . 1960 تک میناکماری ایک بڑی اداکاره بن چکی تھیں. صاحب بیوی اور غلام کے بعد وه شهرت کی بلندیوں پر پهنچ گئیں ،اب ان کا مقابله خود انهی سے تھا ،کیونکه مدمقابل کوئی نهیں تھا. فلمساز اور هدایت کار کمال امروهی سے ان کی محبت کی شادی کامیاب نهیں هوسکی اور دونوں میں علیحدگی هوگئی. فلم پاکیزه ان کی آخری فلم کهی جاتی هے جس نے ان کی موت کے بعد کامیابی کی کئی منزلیں طے کرلیں. کمال امروهی سے طلاق کے بعد جیسے دکھوں کا پهاڑ ٹوٹ پڑا اور انهوں شراب کا دامن تھام لیا . 31اگست 1972 کو انهوں کینسر کے مرض سے مقابله کرتے هوئے، آخری سانس لی. لیکن پاکیزه کو کامیابی کی بلندیوں تک پهنچا دیا ،جو که 14 سال میں مکمل هوئی اور کمال امروهی سے تعلق بھی نهیں رها ،پھر بھی انهوں نے پاکیزه کا دامن نهیں چھوڑا اوراس کی کامیابی کی ضامن بنیں.
مینا کماری نے 1952 میں فلم ڈائرکٹر کمال امروہی کے ساتھ شادی کر لی لیکن انہیں کمال امروہی کی دوسری بیوی کا درجہ ملا۔اس کے باوجود کمال امروہی کے ساتھ انہوں نے 10 سال گزارے لیکن آہستہ آہستہ ان دونوں نے درمیان دوریاں بڑھنے لگیں اور پھر 1964 میں مینا کماری کمال امروہی سے الگ ہو گئیں۔
1962 مینا کماری کی فلمی کر یئر کا اہم پڑاؤ ثابت ہوا۔ اس سال ان کی’ آرتی‘، ’میں چپ رہوں گی‘ اور ’صاحب بی بی اور غلام‘ جیسی فلمیں آئیں۔ اس کے ساتھ ہی ان فلموں کے لیے وہ بہترین اداکارہ کے فلم فیئر ایوارڈ کے لیے نامزد کی گئیں۔ یہ فلم فیئر کی تاریخ میں پہلا ایسا موقع تھا جہاں ایک اداکارہ کو فلم فیئر کے تین نومینیشن ملے تھے۔
اس کے بعد انہوں نے ’پرینیتا‘، ’پھول اور پتھر‘، ’دل ایک مندر‘،’ کاجل ‘اور ’پاکیزہ‘ جیسی فلموں میں یادگار اداکاری کی۔ ’پاکیزہ‘ بنانے میں کمال امروہی کو 14 سال کا وقت لگ گیا اور اس دوران فلم کی اہم اداکارہ مینا کماری کا بیوی کے طور پر ان سے علیحدگی ہو گئی تھی ۔ لیکن انہوں فلم کی شوٹنگ جاری رکھی کیونکہ ان کا خیال تھا کہ ’پاکیزہ‘ جیسی فلموں میں کام کرنے کا موقع بار بار نہیں ملتا ہے۔ ان فلموں میں اپنی اداکاری کے ساتھ انہوں نے ناظرین کے دل میں ایک الگ جگہ بنائی۔ انہوں نے تقریباً 33 سال کے اپنے کریئر میں 92 فلموں میں اداکاری کی۔
فلموں سے انہوں نے کافی دولت اور شہرت کمائی. اپنی خوبصورتی، اداؤں اور بہترین اداکاری سے سب کو اپنا دیوانہ بنا نے والی مینا کماری کی زندگی میں درد آخری سانس تک رہا۔ وہ زندگی بھر اپنی تنہائی سے لڑتی رہیں۔
مینا کماری نے 31 مارچ 1972 میں محض 39 سال کی عمر میں دنیا کو الوداع کہہ دیا۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: