سرورق / خبریں / مظفر پور جنسی استحصال معاملے کی سی بی آئی انکوائری کا مطالبہ –

مظفر پور جنسی استحصال معاملے کی سی بی آئی انکوائری کا مطالبہ –

نئی دہلی، بہار کے مظفر پور میں شیلٹر ہوم میں بچیوں کے ساتھ جنسی استحصال کا معاملہ آج لوک سبھا میں اٹھا اور وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ نے یقین دلایا کہ ریاست کی طرف سے سفارش ملتے ہی مرکزی حکومت معاملے کی تفتیش مرکزی چانچ بیورو (سی بی آئی) حوالے کردے گی ۔

مسٹر سنگھ نے اپوزیشن کے اراکین کی جانب سے اٹھائے جانے والے معاملے پرکہا ’’یقینا یہ ایک سنگین معاملہ ہے۔ ریاستی حکومت کی طرف سے جیسے ہی سفارش کی جائے گی ، ہم سی بی آئی کی انکوائری کا حکم دے دیں گے‘‘ ۔

اس سے پہلے کانگریس کی رکن پارلیمان رنجیت رنجن نے وقفہ صفر کے دوران یہ معاملہ اٹھاتے ہوئے کہا کہ مظفر پور میں لڑکیوں کےشیلٹر ہوم میں 29 بچیوں کے ساتھ جنسی استحصال کی تصدیق ہو چکی ہے۔ متاثرین میں ایک سات سالہ لڑکی بھی شامل ہے جو بول بھی نہیں پارہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ 13 لڑکیوں اور اصلاح گھروں پر الزام ہے ۔ وہاں جنسی استحصال کی رپورٹیں سامنے آئی ہیں اور پتہ چلا ہے کہ کونسلنگ کے نام پر انہیں سفید پوش لوگوں کے پاس بھیجا جاتا تھا۔

محترمہ رنجن نے کہا کہ مظفر پور سے بچیوں کو مقامہ، بھاگلپور اور مدھوبنی کے شیلٹر ہوم میں بھیجا گیا ہے لیکن ان شیلٹر ہوموں پر بھی اعتماد نہیں کیا جا سکتا۔ لڑکیوں پر بیانات کو تبدیل کرنے کے لئے دباؤ ڈالا جا رہا ہے۔

انہوں نے مطالبہ کیا کہ عدالت کی نگرانی میں معاملے کی سی بی آئی جانچ کرائی جائے اور جانچ اور سماعت مکمل ہونے تک مرکزی حکومت بچیوں کی حفاظت کو یقینی بنائے ۔ ساتھ ہی انہوں نے ملک بھر میں بچہ اصلاح گھروں، نجی اسکولوں اور کستوربا اسکولوں کے ہوسٹلوں کی جانچ پڑتال کرانے کا مطالبہ کیا۔

راشٹریہ جنتا دل کے جے پرکاش نارائن یادو نے الزام لگایا کہ مظفر پور معاملے کے ملزمان کواثر و رسوخ والوں کا تحفظ حاصل ہے۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: