سرورق / خبریں / مستحقین کو مکانات فراہم کرنے میں بی ڈی اے ناکام گنجور میں زیر تعمیر مکانوں کیلئے 864 افراد نے4 سال قبل اتھارٹی کو رقم پیش کی تھی –

مستحقین کو مکانات فراہم کرنے میں بی ڈی اے ناکام گنجور میں زیر تعمیر مکانوں کیلئے 864 افراد نے4 سال قبل اتھارٹی کو رقم پیش کی تھی –

بنگلورو : پیشگی رقم ادا کرنے کے باوجود بنگلورو ڈیولپمنٹ اتھارٹی (بی ڈی اے ) گاہکوں کو مقرر ہ وقت پر فلاٹ فراہم کرنے میں لاپروائی کا اظہار کررہی ہے جس کے سبب مستحقین نے بی ڈی اے کے ذمہ داروں پر برہمی ظاہر کی ہے ۔ باوثوق ذرائع سے ملنے والی اطلاع کے مطابق بی ڈی اے مکانات فراہم کرنے کی یقین دہانی کراتے ہوئے گاہکوں سے پیشگی طور پر کروڑوں روپئے حاصل کئے ہیں ۔ رقم وصول کرکے 4سال کا عرصہ گزر چکا ہے اس کے باوجود بی ڈی اے نے ابھی تک مکانات کا تعمیری کام مکمل کرکے گاہکوں کے حوالے نہیں کیا ہے ۔ قرضہ لے کر بی ڈی اے کو پیشگی رقم اداکرنے والے گاہکوں کو نہ مکان مل رہا ہے اور نہ ہی وہ قرضہ ادا کرنا ممکن ہورہا ہے ۔ بی ڈی اے افسروں کی لاپروائی کے نتیجہ میں گاہکوں کو پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ سال 2013-14 میں مہادیوپورہ حلقہ کی حدود میں آنے والے گنجور نامی علاقہ میں بی ڈی اے نے 10 ایکڑ زمین پر فلاٹوں کی تعمیر کا کام شروع کیا تھا ۔ اس موقع پر خواہشمند افراد سے عرضیاں طلب کرکے ان سے پیشگی رقم بھی وصول کرلی ۔ اس موقع پر اتھارٹی نے عرضی گزاروں کو یقین دہائی کرائی تھی کہ رقم وصول کرنے کے صرف 3 سال بعد متعلقہ افراد میں فلاٹس تقسیم کردیئے جائیں گے ۔ اس وقت ایک کمرہ والے مکان کیلئے 612 افراد ، دو کمرے والے مکان کیلئے 168 اور 3 کمرے والے مکان کیلئے 84 افراد نے عرضیاں پیش کرکے پیشگی رقم بھی ادا کئے تھے ۔ ایک کمرہ والے مکان حاصل کرنے والے ایس سی ، ایس ٹی زمرہ کو 6.18 لاکھ ، پسماندہ طبقہ کیلئے 7.75 لاکھ اور جنرل زمرہ سے بی ڈی اے نے 9.95لاکھ روپئے وصول کئے تھے ۔ اسی طرح دو کمرے والے مکان کیلئے 14 لاکھ اور 3 کمرے والے مکان کیلئے 23 لاکھ روپئے مقرر کئے گئے تھے۔ بی ڈی اے گاہکوں سے پیشگی رقم وصول کرلی ہے ۔ لیکن فلاٹوں کا تعمیری کام شروع کرکے 4 سال کا عرصہ ہونے کے باوجود ابھی تک کام مکمل نہیں ہوا ہے ۔ بتایا جارہا ہے کہ گُنجور رہائشی مکانات کی تعمیر کیلئے بی ڈی اے نیے95 کروڑ روپیوں کیلئے دیپک کیبلس نامی کمپنی کو کنٹراکٹ دیا تھا ۔ ٹنڈر حاصل کرکے ایک سال کا عرصہ گزر جانے کے باوجود اس کمپنی نے تعمیری کام مکمل نہیں کیا ۔ جس کے سبب بی ڈی اے نے دیپک کیبلس کا ٹنڈر ختم کردیا ۔ اس کے بعد دوبارہ ٹنڈر طلب کیا گیا جس میں میورک ہولڈنگس نامی کمپنی نے ٹنڈر حاصل کیا ہے ۔ دیپک کیبلس کی لاپروائی کے سبب مقررہ وقت پر تعمیری کام مکمل کرنا ممکن نہیں ہوسکا ۔ اس لئے اس کمپنی کا ٹنڈر بھی رد کردیا گیاہے ۔ بی ڈی اے کے ایگزی کیٹیو افسر گوڈیا کے مطابق فلاٹوں کی تعمیر کیلئے ٹنڈر حاصل کرنے والی کمپنی نے مقرر وقت پر تعمیری کام مکمل نہیں کیا ہے ۔ جس کے سبب گاہکوں کو مکانات فراہم کرنے میں تاخیر ہورہی ہے ۔ کمپنی نے 25 جولائی سے قبل کام مکمل کرلینے کی یقین دہانی کرائی ہے ۔ جس کے تحت جولائی کے اواخر تک مستحقین میں مکانات تقسیم کردیئے جائیں گے ۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: