سرورق / خبریں / مسائل سے حل تک ۔۔۔ شہریوں کا منشور وزیر اعلیٰ سدا رامیا تک پہنچا –

مسائل سے حل تک ۔۔۔ شہریوں کا منشور وزیر اعلیٰ سدا رامیا تک پہنچا –

بنگلورو۔یکم اپریل (ف ن)شہر کو دیمک کی طرح کھا رہے مسائل کے حل سے لے کر ایسے اہم چیلنج تک جنہیں حکومت کی ترجیحات کی فہرست میں اولین مقام حاصل ہونا چاہئے ، بنگلور شہر کے آٹھ زونس سے شہریوں کی بہبودی انجمنوں نے ایک منشور تیار کیا ہے ، یہ منشور عوامی سطح پر کئی مذاکرات اورافسران کے ساتھ تبادلہ خیال کے بعد تیار کیا گیا تھا ۔ یہ منشور پچھلے دنوں ریاستی وزیر اعلی سدا رامیا کی خدمت میں پیش کیا گیا ہے۔مذکورہ منشور ، ٹائمس آف انڈیا کے ایک اقدام ’’بنگلورو فارورڈ‘‘ کا نتیجہ ہے جس نے ریاستی حکومت ، بلدی اداروں اور بنگلور کے عام عوام کو ایک ساتھ لا کر ایک تعمیری اور سب کی شرکت والا پلیٹ فارم تیار کیا تھا تاکہ عوام کے مسائل کو سب مل کر سوچیں ، ان پر غورو فکر کیا جائے اور ان مسائل کے لئے مناسب حل کی تلاش کی جا سکے تاکہ آنے والے اسمبلی انتخابات میں ان مسائل کو مرکزی حیثیت فراہم کرنے اور اسی کی بنیاد پر انتخابی نتائج کے اظہار کو ممکن بنایا جا سکے۔واضح رہے کہ اس کے لئے شہر کے مختلف مقامات پر پانچ زونل بنگلور فارورڈ کی تقاریب منعقد کی گئی تھیں۔یہ پانچ تقاریب دسمبر 2017 کی ابتداء سے جنوری 2018 کے اختتام تک منعقد کی گئی تھیں اور ان تقاریب میں چھ اہم اور مرکزی شعبہ جات پر توجہ مرکوز کی گئی۔ان کارگاہوں سے حاصل ہونے والے رد عمل اور تجاویز کی بنیاد پر مزید صلاح و مشورے کئے گئے جس کے بعد اس منشور کو آخری شکل دی گئی۔سب سے پہلا بنگلورو فارورڈ اجلاس 9 دسمبر 2017 کو منعقد کیا گیا تھا اور اس کا آخری اجلاس 20 جنوری 2018 کو منعقد ہوا، اس کے لئے پانچ مختلف شاخیں تشکیل دی گئی تھیں جو پانچ زونس کے لئے تھیں ، مشرقی زون، مغربی زون، جنوبی زون، مہادیوا پورا، بومن ہلی اور یلہنکا، ان کے علاوہ اس میں راجا راجیشوری نگر اور داسر ہلی کو بھی شامل کر لیا گیا تھا۔اس تحریک نے عام عوام کو اس بات کا موقع فراہم کیا تھا کہ وہ شہر کے اہم فیصلہ کرنے والے افراد کے ساتھ تبادلہ خیال کر سکیں ، جن میں شہر کے مئیر، بنگلور شہری ترقیات کے وزیر اور بی بی ایم ٹی و بی ڈبلیو ایس ایس بی کے اہم اور اعلیٰ افسران و حکام شامل ہیں۔ان تمام اجلاس میں ایک بات جو زیادہ عمومیت کے ساتھ محسوس کی گئی وہ یہ کہ عوام کے مسائل کو سننے کے سلسلہ میں سب سے اہم کردار اثر انگیز انتظامیہ کا ہوتا ہے۔اس منشور کے ذریعہ شہری رضاکاروں کا احساس ہے کہ ایک ایسی انتظامیہ وجود میں آسکتی ہیں جو عوام کو نظر انداز کرنے کے بجائے انہیں سنجیدگی کے ساتھ لے گی۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: