سرورق / خبریں / مدھیہ پردیش بھارت بند: امن و امان کے پیش نظر پولیس انتظامیہ مستعد –

مدھیہ پردیش بھارت بند: امن و امان کے پیش نظر پولیس انتظامیہ مستعد –

بھوپال، کچھ تنظیموں کی طرف سے ریزرویشن کے خلاف آج بھارت بند کے اعلان کے پیش نظر دارالحکومت بھوپال سمیت مدھیہ پردیش میں پولیس انتظامیہ مکمل طور چوکس ہے اور ابھی تک کہیں سے کسی ناخوشگوار واقعہ کی اطلاع نہیں ہے۔ ابھی حال ہی میں 2 اپریل کو دلت تنظیموں کے بھارت بند کے دوران کچھ اضلاع میں تشدد کے واقعات ہوئے تھے، وہاں پر خصوصی احتیاطی قدم اٹھائے گئے ہیں۔ سیکورٹی کے انتظامات کوچاک چوبند رکھنے کے لئے دارالحکومت بھوپال اور دیگر مقامات پر اضافی پولیس فورس تعینات کیا گیا ہے۔ چمبل اور گوالیار ڈویژن میں کچھ شہروں میں احتیاطاً کرفیو لگایا گیا ہے اور دارالحکومت بھوپال سمیت مختلف شہروں میں حکم امتناعی نافذ ہے۔بھوپال میں حکم امتناعی کے درمیان یومیہ زندگی معمول پر ہے. اسکول کالج کھلے ہیں۔
سیکورٹی کے لئے ریپڈ ایکش ٹاسک فورس (آر اے ایف ) اور اسپیشل آرمڈ فورس (ایس اے ایف) کے ایک ایک ہزار جوانوں کے ساتھ مقامی پولیس کے چار ہزار پولیس اہلکار تعینات کئے گئے ہیں۔اسی طرح اندور میں بھی معمولات زندگی رواں دواں ہے، حالانکہ وہاں بھی حکم امتناعی نافذ ہے۔ ریاست کے دیگر حصوں سے بھی بند کے دوران ناخوشگوار واقعہ کی اطلاع نہیں ہے۔
گوالیار اور چمبل علاقے میں پولیس انتظامیہ مکمل طور محتاط ہے. ان علاقوں میں 2 اپریل کے بند کے دوران تشدد کے واقعات ہوئے تھے، جس میں سات لوگوں کی موت ہو گئی تھی. اس بار پولیس اور انتظامیہ مکمل طور پر سخت ہے۔بھنڈ میں آج دن بھر کے لئے کرفیو لگا یاگیاہے۔ بھنڈ ضلع کے مهگاؤں میں صبح آٹھ بجے سے ہی کرفیو لگا دیا گیا۔ ضلع کے اسکول کالج، بینک، سرکاری دفاتر بند ہیں۔ ضلع میں انٹرنیٹ خدمات کل رات سے 48 گھنٹے کے لئے بند کر دی گئی ہیں۔سیکورٹی کے پیش نظر حساس علاقوں میں اضافی پولیس فورس تعینات کیا گیا ہے۔
مرینا میں بھی آج کرفیو لگا ہوا ہے. انٹرنیٹ خدمات بند کر دی گئی ہیں. جگہ جگہ پولیس کی گشت جاری ہے. گوالیار میں حکم امتناعی نافذ ہے اور اسکول کالج کھلے ہوئے ہیں.شيوپور ضلع میں دفعہ 144 لگا دی گئی ہے. انٹرنیٹ خدمات بھی بند ہیں۔ ریاستی حکومت اور وزیر اعلی شیوراج سنگھ چوہان خود ریاست کے حالات پر مسلسل نظر رکھے ہوئے ہیں۔ بند کا اعلان سوشل میڈیا پر گزشتہ کچھ دنوں سے چل رہے میسج کی بنیاد پر کچھ تنظیموں کی جانب سے کیا گیا ہے. حالانکہ ابھی تک کوئی لیڈر سامنے نہیں آیا ہے۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: