سرورق / کھیل / محمد کیف نے ریٹائرمنٹ کا اعلان کیا –

محمد کیف نے ریٹائرمنٹ کا اعلان کیا –

نئی دہلی، ہندوستان کے سابق کرکٹ کھلاڑی محمدکیف ، جنہوں نے تقریباً 12سال پہلے ہندوستانی ٹیم کے لئے آخری میچ کھیلا تھا،آج کرکٹ کے سبھی فارمیٹ سے ریٹائرمنٹ کا اعلان کردیا ہے۔
اس وقت ہندوستانی ٹیم انگلینڈ میں نیٹ ویسٹ سیریز کھیلنے ہی گئی ہوئی ہے ۔ اس موقع پر ریٹائر منٹ کا اعلان کرتے ہوئے کیف تھوڑے جذباتی بھی ہوئے۔ انہوں نے ٹویٹ کیا ‘میں آج ریٹائر ہورہا ہوں، اس تاریخی نیٹ ویسٹ سیریز کو 16 سال گزر چکے ہیں، جس کا میں بھی کبھی حصہ تھا۔’ انہوں نے مزید لکھا، ‘ ہندوستان کے لئے کھیلنا میرے لئے خوشی کی بات ہے۔
کیف نے بی سی سی آئی کے کارگزار صدر سی کے کھنہ اور کاگزار سکریٹری امیتابھ چودھری کو ای میل لکھا ’’ میں آج سبھی طرح کے فرسٹ کلاس کرکٹ سے سبکدوش ہورہا ہوں۔میرے لئے آج کا دن کافی اہم ہے کیونکہ ۱۶ سال پہلے آج ہی کے دن سال ۲۰۰۲ میں لارڈس کے میدان میں نیٹ ویٹ سیریز کے فائنل میچ میں اپنی خاص پہچان بنائی تھی جو کہ میری زندگی کا یادگار لمحہ تھا اس لئے میں آج ہی کے دن سبکدوش ہورہا ہوں ۔
خیال رہے کہ اس سیریز میں میزبان انگلینڈ کے ساتھ ساتھ انڈیا اور سری لنکا کی ٹیم بھی تھی. لیکن فائنل میں انگلینڈ اور انڈیا کا آمنا سامنا ہوا۔ اس میچ میں محمد کیف نے یووراج کے ساتھ مل کر ہندوستان کو جیت دلائی۔
ہندوستان اور انگلینڈ کے درمیان نیٹ ویسٹ سیریز کے فائنل مقابلے میں انگلینڈ نے ٹاس جیت کر پہلے بلے بازی کرتے ہوئے ناصر حسین (115) اور مارکس ٹریسكوٹك (109) کی سنچریوں کی بدولت ہندوستان کو 326 رنز کا ہدف دیا تھا. اس کا تعاقب کرتے ہوئے ہندوستان کی شروعات شاندار رہی لیکن ٹیم بیچ میں لڑکھڑا گئی تھی۔
اس کے بعد دو بلے باز ایسے تھے جنہوں نے ٹیم انڈیا کو جیت دلائی تبھی ۔ ان میں ایک بلے باز تھے محمد کیف اور دوسرے یوراج سنگھ۔ اس میچ میں شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کرنے کے لئے محمد کیف کو مین آف دی میچ کا ایوارڈ ملا تھا۔
ہندوستان کے لئے 13 ٹیسٹ، 125 ون ڈے کھیلنے والے 37 سالہ کیف نے 75 گیندوں میں ناٹ آوٹ 87 رن کی اننگ کھیلی تھی. جس میں 6 چوکے اور 2 چھکے شامل تھے. یہی وہ موقع تھا جب ٹیم انڈیا کے اس وقت کے کپتان سوربھ گانگولی نے لارڈز کی بالکنی سے اپنی ٹی شرٹ ہوا میں لہرائي تھی۔
کیف نے اپنے ریٹائرمنٹ کا اعلان کرتے ہوئے لکھا کہ میں کرکٹ کے تمام فارمیٹ کو الوداع کہہ رہا ہوں، یہاں تک کی میں نے فرسٹ کلاس کرکٹ بھی چھوڑنے کا فیصلہ کیا ہے۔ میں آج ریٹائر ہو رہا ہوں، اس تاریخی نیٹ ویسٹ سیریز کو جیتے ہوئے 16 سال ہو گئے ہیں۔ ہندوستان کے لئے کھیلنا میرے لئے خوشی اور فخر کی بات ہے۔
وہ تقریباً12 سال ٹیم انڈیا سے باہر ہیں۔ مڈل آرڈر کےبلے باز نے اپنی شاندار کارکردگی خاص طور پر اپنی چست فیلڈنگ سے ہندوستان کو میچ جتانے میں اہم کردار ادا کیا ہے۔ان کی فیلڈنگ کا ہر کوئی قائل تھا۔
کیف نے سال 2003 میں جنوبی افریقہ میں ہونے والے عالمی کپ کے فائنل تک جگہ بنائی تھی۔ یوراج کے ساتھ ان کی جوڑی بلے بازی کے ساتھ فیلڈنگ میں بھی پسند کی جاتی تھی۔
کیف نے اتر پردیش کو رنجی ٹرافی جتانے میں بھی اہم کردار ادا کیا تھا۔ کیف نے 13 ٹیسٹ میچوں میں ایک سنچری کی بدولت 624 رنز اور 125 ون ڈے میچوں میں 2753 رنز بنائے ہیں، اس میں ان کے نام دو سنچری بھی شامل ہے۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

وزیر کھیل راٹھور سے ملے لکشے سین –

نئی دہلی، جونیئر ایشیائی بیڈمنٹن چمپئن شپ میں 53 سال کے طویل وقفے کے بعد …

جواب دیں

%d bloggers like this: