سرورق / بین اقوامی / كابل میں دہشت گردی کی مذمت کے لئے جمع ہوئے علماء پر خود کش حملہ، 14ہلاک –

كابل میں دہشت گردی کی مذمت کے لئے جمع ہوئے علماء پر خود کش حملہ، 14ہلاک –

کابل۔ افغانستان کی راجدھانی كابل میں دہشت گردی کی مذمت کے لئے جمع ہوئے علماء پر پیر کو کئےگئے خود کش حملے میں 14افراد ہلاک ہو گئے۔ سیکورٹی حکام نے یہ اطلاع دی۔ بم دھماکے کا واقعہ کابل کے مغرب میں واقع ایک رہائشی علاقے کے قریب ہوا۔ جائے حادثہ پر اپنے خاندانوں کے ساتھ آئیں خواتین بلک رہی تھیں۔
اس حملے کی ذمہ داری ابھی تک کسی بھی تنظیم نے نہیں لی ہے۔ یہ واقعہ آئندہ 20 اکتوبر کو مجوزہ پارلیمانی اور ضلع کونسل کے انتخابات سے پہلے سلامتی انتظامات میں کوتائی کی عکاسی کرتا ہے۔ ملک بھر کے 2000 سے زیادہ مذہبی علما برسوں سے خونریزی کی مذمت کرنے کے لئے اتوارکو لويا جرگا خیمہ میں جمع ہوئے تھے۔ ان علماء نے فتوی جاری کیا تھاجس میں خودکش حملوں کوناجائز قراردیاگیا اوریہ بھی مطالبہ کیاگیا کہ طالبان جنگجوامن بحال کریں جس سےغیر ملکی فوجیں واپس جاسکیں ۔
ایک سیکورٹی افسر نے رائٹرز سے مرنے والوں کی تعداد میں اضافے کا خدشہ ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ دھماکےکے بعد جائے حادثہ کے قریب دہشت کا ماحول پیداہو گیا۔ طالبان جو2001 میں اقتدار سے بےدخل ہوگئےتھے ایک بارپھر زور پکڑنے لگے ہیں اورپورے ملک میں سخت اسلامی حکومت قائم کرنے کی کوشش میں مصروف ہیں۔ كابل میں حالیہ مہینوں میں بم دھماکے کے کئی واقعات ہو چکےہیں اور مسلمانوں کے مقدس مہینے رمضان کے دوران بھی ایسے واقعات سے نجات کے آثار نظر نہیں آ رہے ہیں۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: