سرورق / خبریں / قومی شاہراہ کی توسیع، چارگنا زیادہ معاوضہ کرنے کسانوں کا مطالبہ –

قومی شاہراہ کی توسیع، چارگنا زیادہ معاوضہ کرنے کسانوں کا مطالبہ –

ٹمکور: رعیت سنگھا کے رہنماؤں نے مطالبہ کیا ہے کہ قومی شاہراہ نمبر 206- ٹمکور۔ہوناور چورخی سڑک کی توسیع کیلئے حکومت کی جانب سے قبضہ کردہ زمین کی قیمت موجودہ مارکیٹ قیمت سے چار گنازیادہ ادا کی جائے۔ رعیت سنگھا کے رہنما ایس این سوامی، آنند، لوکیش و دیگر نے ایک مشترکہ اخباری بیان جاری کرتے ہوئے حکومت سے یہ مطالبہ کیا اور کہا کہ قومی شاہراہ نمبر 206- کو چورفی سڑک بنانے ٹنڈر طلب کیا جاچکا ہے اور پہلے دوسرے مرحلہ میں ٹمکور، گبی اور ٹپٹور تعلقہ جات سے ہوکر جانے والی 119 مکوڑ سڑک کے تعمیری کاموں کا آغاز ہوچکا ہے۔ انہوں نے الزام لگایا کہ ٹپٹور شہر میں افسروں کی جانب سے ادا کیا جارہا ہے معاوضہ بالکل ناکافی ہے اور اسسٹنٹ کمشنر دفتر میں طلب کردہ اجلاس کے دوران بھی افسروں نے بتایا کہ فی گنٹہ کم سے کم 10ہزار روپئے معاوضہ دیا جائے گا۔ جو بالکل نا مناسب ہے اس لئے موجودہ مارکیٹ قیمت کے مطابق معاوضہ ادا کیا جائے۔ انہوں نے بتایا کہ ٹپٹور شہر سے بالکل قریب ہچاگونڈنہلی حدود میں فی گنٹہ 6ہزار روپئے اور مادی ہلی حدود میں 11ہزار روپئے کا اعلان کیا گیا ہے۔ جبکہ اس علاقہ میں فی گنٹہ زمین کی قیمت لاکھوں میں لگائی جارہی ہے یہ آبپاشی علاقہ ہے۔کسان رہنماؤں نے بتایا کہ ٹمکور ضلع کے کسانوں کی اہم فصل ناریل ہے اور اس کے درخت زمین بوس ہورہے ہیں۔ جس کی وجہ سے کسان آم، سپاری، پھنس جیسے کاروباری فصلوں پر منحصر ہیں۔ لیکن زمین کھونے سے بے حد مشکلات کا سامنا ہے۔انہوں نے خبردار کیا کہ اگر موجودہ مارکیٹ قیمت سے چار گنا زیادہ معاوضہ ادا نہیں کیا گیا تو کسان اپنی زمینات پر قبضہ کرنے نہیں دیں گے۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: