سرورق / خبریں / شیوسینا کا اعلان جناح کا پوسٹر ہٹانے والے کو ملے گا 5 لاکھ کا انعام

شیوسینا کا اعلان جناح کا پوسٹر ہٹانے والے کو ملے گا 5 لاکھ کا انعام

نئی دہلی (آئی این ایس ) علی گڑھ مسلم یونیورسٹی میں محمد علی جناح کی تصویر کا تنازعہ اب نریندر مودی کے پارلیمانی حلقہ تک بھی پہنچ گیا ہے۔ ہفتہ کو وارانسی کے اردلی بازار میں اب شیو سینانے محمد علی جناح کے خلاف احتجاج کیا ہے۔ اس دوران شیو سینا نے ایک اعلان بھی کیا ہے ۔ شیوسینا یونٹ نے جناح کے پوسٹر ہٹانے والے کو 5 لاکھ روپے بطور انعام دینے کا اعلان کیا ہے ۔ شیوسینا کے ذیلی ریاست سربراہ اجے چوبے نے کہا کہ آج بھی پاکستان سرحد پر فائرنگ کر رہا ہے اور جوانوں کے سر کاٹ رہا ہے۔ اسی پاکستان کو ہندوستان سے الگ کرکے قائم کرنے میں جناح نے اہم کردار ادا کیا تھا۔ جناح واقعی ایک کھلنایک ہے، جسے توجہ دیا جانا ٹھیک نہیں ہے ۔ اجے چوبے نے بتایا کہ جناح کی تصویر ہٹائے جانے کو لے کر شیوسینا نے 5 لاکھ روپے کے انعام کا اعلان کیا ہے۔ شیوسینا کے کارکن اس پوسٹر کو شہر کے کئی علاقوں میں دیواروں اور آٹو پر لگا رہے ہیں۔ شیوسینا نے اے ایم یو انتظامیہ پر مبینہ طور پر اعزاز کرنے کے لئے مقدمہ درج کرنے کا مطالبہ کیا ہے ۔ شیو سینا سے وابستہ کارکنوں کا کہنا ہے کہ مبینہ طور پر ویلن کو ہیرو بتا کر اے ایم یو انتظامیہ بغاوت پر آ مادہ ہے ۔تاہم یہ وہ معاملہ ہے جس سے محض بھگوائی فرقہ سیاسی مفادات حاصل کرناچاہتے ہیں ۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: