سرورق / کھیل / سیمی فائنلس تک کے ریکارڈز ایک نظر میں 62؍میچوں میں 161؍ گول۔ 211؍زرد کارڈز –

سیمی فائنلس تک کے ریکارڈز ایک نظر میں 62؍میچوں میں 161؍ گول۔ 211؍زرد کارڈز –

فیفا عالمی کپ 2018ء کے سیمی فائنل مقابلے ختم ہوچکے ہیں۔ فیصلہ کن ٹکر کے لئے ٹیمیں بھی طئے ہو چکی ہیں جو فرانس اور کروشیا ہیں۔ انگلینڈ اور کروشیا کے درمیان کھیلا گیا دوسرا سیمی فائنل اس ٹورنمنٹ کا 62؍واں میچ تھا۔ ان 62؍میچوں میں مجموعی طورپر 161؍گول بنائے گئے۔ بلجیئم کی ٹیم فائنل میں نہیں پہنچ سکی۔ سیمی فائنل میں اسے فرانس کے ہاتھوں شکست کا منہ دیکھنا پڑا۔ لیکن اس کے نام ایک ریکارڈ بنا ہے اور وہ سب سے زیادہ گول کا ہے۔ اس نے اپنے 6؍میچوں میں 14؍گول اسکور کئے۔ بلجیئم کی ایک اور خاصیت یہ رہی کہ سیمی فائنل سے قبل تک یہ ٹیم نا قابل شکست رہی تھی۔ اس با ر کے عالمی کپ میں اب تک 211؍ کھلاڑیوں کو زرد کارڈ دکھا ئے گئے جبکہ ٹورنمنٹ کے دوران دکھائے گئے سرخ کارڈز کی تعداد 4؍رہی۔ فٹ بال میں دفاعی کھلاڑیوں کا رول سب سے اہم ہوتا ہے۔ اس بار میزبان روس کا دفاع سب سے مضبوط اور موثر رہا۔ اس کے کھلاڑیوں نے مجموعی طور پر 259؍ کلیئر نس دیئے اور حریفوں کی کوششوں کو ناکام کرتے ہوئے کئی گول بچائے۔ فیفا عالمی کپ 2018ء کے سیمی فائنل تک سب سے کامیاب گول کیپر کا اعزاز میکسیکو کے کھلاڑی گولیر مواوچانی کو حاصل ہوا۔ انہوں نے سب سے شاندار مظاہرہ کیا اور مخالف ٹیموں کی جانب سے گول بنانے کی 25؍کوششوں کو ناکام بنایا۔ مخالف ٹیم کے گول پر سب سے زیادہ حملے کرنے کا سہرا برازیل کے سر رہا۔ اس کے کھلاڑیوں نے حریفوں کے گول پر کل 292؍ اٹیک کئے۔ اس ٹیم کے کھلاڑی نیمار جونیئرکی جانب سے حریف ٹیم کے گول میں داخل ہونے کی 27؍بار کوشش ہوئی۔ علاوہ ازیں انہوں نے 13؍بار گول کو نشانہ بنایا۔ انفرادی طورپر سب سے زیادہ گول اسکور کرنے والے کھلاڑی کو ’’گولڈن بوٹ‘‘ اعزاز سے نوازا جا تا ہے۔ فی الحال اس کے سب سے مضبوط دعویدار انگلینڈ کے کپتان ہیر کین ہیں جنہوں نے 6؍گول بنا رکھے ہیں۔ اس کے بعد پرتگال کے کرسٹیانو رونالڈو، بلجیئم کے آر لوکا کو اور روس کے ذی چیری شیو نے چار چارگول بنائے ہیں۔ لیکن ان سے کوئی خطرہ نہیں کیونکہ ان کی ٹیمیں باہر ہوچکی ہیں۔ ان کے بعد کولمبیا، اسپین ، یوروگوئے اور روس کے ایک ایک کھلاڑی بھی تین تین گول کے ساتھ تیسرے نمبر پر ہیں۔ یہ بھی برطانوی کپتان کا کچھ نہیں بگاڑ سکتے۔ فرانس کے کے مباپے اور اے گریز من نے بھی اب تک تین تین گول داغے ہیں۔ فائنل میں اگر وہ مزید 4؍ گول بنا پاتے ہیں تو کین کے لئے مشکل پیدا ہوسکتی ہے۔ تاہم اس کا امکان کم ہے۔فیر پلے اور ڈسپلن ٹیم کے اعزاز کی فاتح ایشیائی ٹیم جا پان ٹیم رہی۔ اس نے اپنے کھیل کے ساتھ ساتھ بہترین رویہ و سلوک سے بھی روس میں کئی دل جیتے۔ ایک منفی ریکارڈ یہ بھی رہا کہ نظم و ضبط کی سب سے زیادہ خلاف ورزی کے کولمبیا کے کھلاڑی کارلوس سانچزمرتکب پائے گئے۔ انہوں نے کل 6؍فاؤل کئے۔ اب تک دکھائے گئے 4؍ سرخ کارڈز میں سے ایک ان کے نام بھی رہا۔ تیسرے مقام کے لئے میچ اور فائنل تک مزید ریکارڈز بھی بن سکتے ہیں جو آنے والے وقت کے ساتھ ہی معلوم ہو سکیں گے۔!

Leave a comment

About saheem

Check Also

وزیر کھیل راٹھور سے ملے لکشے سین –

نئی دہلی، جونیئر ایشیائی بیڈمنٹن چمپئن شپ میں 53 سال کے طویل وقفے کے بعد …

جواب دیں

%d bloggers like this: