سرورق / خبریں / سرینواسپور کے کسان آم کی بجائے صندل کی لکڑی کی جانب راغب –

سرینواسپور کے کسان آم کی بجائے صندل کی لکڑی کی جانب راغب –

سرینواسپور۔آم کی کاشت کو اہم ذریعہ بنانے والے تعلقہ کے کسانوں کا رخ اب صندل کی لکڑی کی جانب دکھائی دے رہاہے۔ اطلاع کے مطابق تعلقہ کے آول کوپہ گاؤں کے قریب محکمہ جنگلات کی جانب سے صندل کے درخت نصب کئے گئے ہیں اور محکمہ کی ضرورت مکمل ہونے کے بعد کسانوں کو بقیہ صندل کے پودے فروخت کئے جارہے ہیں۔ آول کوپہ صندل لکڑی کی نرسری ریاست بھر میں مشہور ہے اور یہاں کے تقریباً15؍لاکھ پودے ریاست بھر میں نصب کئے گئے ہیں اور نجی شعبوں میں بھی کاشت کی گئی ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ چند کسان علاحدہ طورپر اپنی زمینات میں صندل کی لکڑی لگارہے ہیں تو چند کسان آم کے درختوں کے درمیان لگارہے ہیں۔ گزشتہ چند سال سے آم کی فصل کا حال برا ہے۔ فصل کے لئے روگ، آم کی فصل کی قیمتوں میں کمی نے اب کسانوں کو متبادل راستہ اختیار کرنے پر مجبور کیاہے۔ تاہم صندل کی لکڑی میں زیادہ فائدہ کی امید میں کسان اس جانب رخ کئے ہیں لیکن صندل چوروں سے لکڑی کو بچا نا سب سے بڑا سوال ہے کیونکہ صندل چور جنگلات ،پولیس اسٹیشنوں کے احاطہ میں صندل کی لکڑی کی چوری کررہے ہیں۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: