سرورق / خبریں / سانبہ میں دراندازی کی کوشش ناکام، راجوری میں جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی-

سانبہ میں دراندازی کی کوشش ناکام، راجوری میں جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی-

جموں، فوج نے پیر کے روز جموں وکشمیر کے ضلع سانبہ میں بین الاقوامی سرحد پر دراندازی کی کوشش ناکام بنانے کا دعویٰ کیا۔ اس دوران پاکستانی فوجیوں کی جانب سے ضلع راجوری میں لائن آف کنٹرول کے نوشہرہ سیکٹر میں جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کی گئی۔ بی ایس ایف ذرائع نے بتایا ’سانبہ کے رام گڑھ سیکٹر میں بین الاقوامی سرحد پر مامور فوجیوں نے پیر کی صبح کچھ افراد کی مشتبہ نقل وحرکت دیکھی‘۔
انہوں نے بتایا کہ جوں ہی وہ افراد باڑ کے نذدیک پہنچتے تو بھارتی چوکیوں میں تعینات فوجیوں نے ان پر فائرنگ کی جس کی وجہ سے وہ واپس جانے پر مجبور ہوئے۔ ذرائع نے بتایا کہ یہ رواں برس میں تیسری دفعہ ہے کہ جب بی ایس ایف اہلکاروں کی جانب سے دراندازی کی کوشش ناکام بنائی گئی۔ بی ایس ایف اور پاکستانی رینجرز نے گذشتہ ہفتے سچیت گڑھ سیکٹر میں فلیگ میٹنگ کرکے سرحد پر امن بنائے رکھنے پر زور دیا تھا۔ دریں اثنا پاکستانی فوجیوں نے راجوری میں ایل او سی پر جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کی ہے۔ دفاعی ذرائع نے بتایا کہ پاکستانی فوجیوں نے پیر کی صبح قریب ساڑھے نو بجے راجوری کے نوشہرہ سیکٹر میں بھارتی فوج کی چوکیوں پر بلااشتعال فائرنگ کی۔
انہوں نے بتایا ’فوجیوں نے سرحد پار سے ہونے والی فائرنگ کا موثر جواب دیا۔ طرفین کے مابین فائرنگ کا تبادلہ وقفہ وقفہ سے جاری ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ فائرنگ کے تبادلے میں کسی جانی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ہے۔ انہوں نے بتایا کہ پاکستان کی جانب سے گذشتہ شام بھی اسی سیکٹر میں جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کی گئی۔ ڈپٹی کمشنر راجوری ڈاکٹر شاہد اقبال چودھری نے اپنے ایک ٹویٹ میں کہا ’نوشہرہ سیکٹر میں جنگ بندی معاہدے کی تازہ خلاف ورزی کی گئی۔ کسی جانی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ہے‘۔جموں خطہ میں ایل او سی اور بین الاقوامی سرحد پر گذشتہ دو ماہ کے دوران شدید کشیدگی دیکھی گئی تھی جس دوران قریب 20 شہری و فوجی اہلکار جاں بحق ہوئے۔ ہندوستان اور پاکستان کے درمیان 1999 ء کے تنازعے کے بعد سنہ 2003 میں جنگ بندی کا معاہدہ طے پایا۔ تاہم جنگ بندی کے معاہدے کے باوجود سرحدوں پر فائرنگ کے واقعات پیش آتے رہے ہیں۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: