سرورق / خبریں / سابق وزرائے اعلی سرکاری بنگلہ کے حقدار نہیں: سپریم کورٹ

سابق وزرائے اعلی سرکاری بنگلہ کے حقدار نہیں: سپریم کورٹ

نئی دہلی،  (یواین آئی) سپریم کورٹ نے سابق وزرائے اعلی کے لئے سرکاری بنگلہ دیئے جانے سے متعلق اتر پردیش حکومت کے ترمیمی قانون کو آج مسترد کر دیا۔جسٹس رنجن گوگوئی اور جسٹس آر بھانومتی کی بنچ نے غیر سرکاری تنظیم ’لوک پرہری‘ کی درخواست پر اپنا فیصلہ سنایا۔عدالت نے کہا کہ سابق وزیر اعلی مستقل طور پر سرکاری بنگلہ حاصل کرنے کے حقدار نہیں ہیں۔عدالت نے اترپردیش کے وزیر (تنخواہ، الاؤنس اور دیگر دفعات) قانون کی دفعہ 4 (3) کو یہ کہتے ہوئے مسترد کر دیا کہ اس طرح کا قانون امتیازی ہے۔یہ آئین کے مطابق نہیں ہے۔عدالت عظمی نے اگست 2016 میں ایک فیصلہ سنایا تھا، جس میں اس نے کہا تھا کہ سابق وزرائے اعلی کو سرکاری بنگلوں کا الاٹمنٹ غیر مناسب ہے اور ایسے بنگلے حکومت کو واپس دیئے جانے چاہئے، لیکن ریاستی حکومت نے قانون میں ترمیم کرکے سابق وزرائے اعلی کے لئے مستقل طور پر سرکاری بنگلے فراہم کئے تھے۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: