سرورق / خبریں / راہل گاندھی آخر کب جانیں گے : جیٹلی

راہل گاندھی آخر کب جانیں گے : جیٹلی

نئی دہلی، (یو این آئی) بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے سینئر لیڈر اور مرکزی وزیر خزانہ ارون جیتلی نے کانگریس صدر راہل گاندھی کے مدھیہ پردیش میں کسانوں کی ایک ریلی سے وزیراعظم نریندر مودی پر لگائے گئے الزامات کو مکمل طورپر حقائق سے پرے اور جھوٹ قرار دیا اور مسٹر گاندھی کی معلومات کی سطح پر سوال اٹھایا کہ آخر وہ کب جانیں گے اور سمجھیں گے۔مسٹر جیٹلی نے فیس بک پر ایک پوسٹ میں کہاکہ ہر بار پارلیمنٹ میں اور پارلیمنٹ کے باہر ، جب میں مسٹر راہل گاندھی کے خیالات سنتا ہوں تو میں خود سے یہی پوچھتا ہوں ۔ وہ کتنا جانتے ہیں ؟ وہ کب جانیں گے؟ ۔ انہو ں نے کہاکہ مدھیہ پردیش میں آج ان کی تقریر سن کر انکا یہ تجسس اور بڑھ گیا ہے کہ کیا انہیں کافی معلومات نہیں دی جاتی ہے یا پھر وہ حقائق کے تعلق سے نہایت لاپرواہ ہیں۔ ان کی تقریر کے چھ نکات ایسے ہیں جو انکی اس سوچ کو مضبوط کرتے ہیں۔
انہوں نے کہاکہ مسٹر گاندھی نے وزیراعظم پر ملک کے پندرہ چوٹی کے صنعت کاروں کے ڈھائی لاکھ کروڑ روپے کا قرض معاف کرنے کا الزام لگایا ہے جو مکمل طورپر جھوٹ ہے ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے کسی بھی صنعت کار کا ایک روپیہ بھی معاف نہیں کیا ہے۔ سچ بالکل الگ ہے ۔ جن کے پاس بھی بینکوں اور دیگر قرض دینے والوں کا بقایہ ہے انہیں دیوالیہ اعلان کیا گیا ہے اور انہیں مودی حکومت کے ذریعہ بنائے گئے دیوالیہ اور ریفرائنمنٹ قانون کے تحت ان کی کمپنیوں سے بے دخل کردیا گیا ہے۔ دراصل انہیں یہ قرض ترقی پسند اتحاد (یو پی اے) حکومت کے دور میں دےئے گئے تھے۔مسٹر گاندھی نے ضلع مندسور کے پپلیامنڈی میں کسان گول معاملہ کی برس پر منعقدہ ’کسان سمردھی سنکلپ ریلی‘ میں اپنے خطاب میں مسٹر مودی پر حملہ کرتے ہوئے کہاکہ انہوں نے پندرہ لوگوں کا ڈھائی لاکھ کروڑ روپیہ معاف کیا ہے لیکن کسانوں کے لئے کچھ نہیں کیا۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: