سرورق / خبریں / جیسیکا لال قتل کیس: سبرینا نے بہن کے قاتل منو شرما کو کیا معاف –

جیسیکا لال قتل کیس: سبرینا نے بہن کے قاتل منو شرما کو کیا معاف –

نئی دہلی۔ تقریبا 20 سالہ پرانا جیسیکا لال قتل کیس ایک بار پھر سے چرچا میں ہے۔ دراصل، جیسیکا کی بہن سبرینا لال نے مجرم منو شرما کو معاف کر دیا ہے۔ سبرینا نے عوامی فلاح وبہبود کے آفیسر کو بھیجے گئے خط میں یہ بات کہی ہے۔ سبرینا نے لکھا کہ اگر منو شرما کو سزا میں رعایت بھی ملتی ہے، تو اسے کوئی دقت نہیں ہے۔
بتا دیں کہ جیسیکا لال قتل کیس میں اہم قصوروار سدھارتھ وششٹھ عرف منو شرما کو عمر قید کی سزا ہوئی ہے۔ جیل انتظامیہ اب اسے تہاڑ کی اوپن جیل میں منتقل کرنے جا رہی ہے۔ سبرینا کے مطابق، انہیں اطلاع ملی ہے کہ منو شرما کا رویہ بہتر ہو رہا ہے۔ ایسی صورت حال میں منو شرما کو اوپن جیل میں منتقل کرنے کے فیصلے پر انہیں کوئی اعتراض نہیں ہے۔
سبرینا نے عوامی فلاح و بہبود کے افسر کو خط میں لکھا، “مجھے بتایا گیا ہے کہ وہ جیل کے اندر کافی چیریٹی کا کام کر رہا ہے، وہ ساتھی قیدیوں کی مدد بھی کرتا ہے، مجھے لگتا ہے کہ یہ اس کے بہتر ہونے کا اشارہ ہے۔ یہ سچ ہے کہ اس نے اپنی زندگی کے 15 سال جیل کی سلاخوں کے پیچھے ہی گزارے ہیں۔ میں بتانا چاہوں گی کہ مجھے اس کی رہائی سے کوئی پریشانی نہیں ہے۔ ”
کیا ہے جیسیکا لال قتل کیس؟
انتیس اپریل، 1999 کی رات دہلی کے ٹیمرنڈ کورٹ ریسٹورینٹ میں مشہور ماڈل جیسیکا لال کو گولی مار کر قتل کر دیا گیا تھا۔ سبب جیسیکا نے شراب پروسنے سے انکار کر دیا تھا۔ اس کا قاتل کوئی اور نہیں منو شرما تھا، جو ہریانہ کے قدآور کانگریسی رہنما ونود شرما کا بیٹا ہے۔ لہذا جیسیکا لال قتل کیس میں انصاف کی راہیں مشکل ہو گئیں۔ سات سال تک جاری مقدمہ کے بعد فروری 2006 میں سبھی ملزمین بری ہو گئے۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: