سرورق / خبریں / جو ووٹر نہیں آنا چاہیں انہیں ہاتھ پیر باندھ کر لائیں بی …

جو ووٹر نہیں آنا چاہیں انہیں ہاتھ پیر باندھ کر لائیں بی …

بنگلور: (آئی این ایس (بی جے پی کے وزیراعلیٰ کے عہدے کے امیدوار ایڈی یورپا نے آج بیلگام میں اپنی پارٹی کے کارکنوں سے کہا کہ جو لوگ ووٹ دینے نہ آئیں ان کے ہاتھ پیر باندھ کر پولنگ اسٹیشن تک لے کر آئیں۔ کانگریس نے ایڈی یورپا کو اس بیان پر گھیر لیا ہے اور ان پر دھونس جمانے کی سیاست کرنے کا الزام لگایا ہے۔ بی جے پی نے بھلے ہی نسلی مساوات کو دیکھتے ہوئے لنگایت لیڈر ایڈی یورپا کو پارٹی کے وزیر اعلیٰ کے عہدے کا امیدوار بنایا ہو لیکن ساتھ ہی بدعنوانی کے الزامات کی وجہ سے ان کے اور جناردھن ریڈی کو وزیر اعظم مودی کے ساتھ اسٹیج پر شرکت نہ کرنے کامشورہ دیا ہے۔ ایسے میں ایڈی یورپا کا کارکنوں کو ووٹروں کو ہاتھ پیر باندھ کر لانے کی ہدایت دینا پارٹی کی رسوائی کاسبب بن گیا ہے ۔ سینئر بی جے پی لیڈر ایڈی یورپا نے کہا کہ کارکنوں سے اپیل کروں گا کہ وہ خاموشی سے نہ بیٹھیں۔اگلے 5۔6 دن تک کام کریں، جو ووٹر نہیں آنا چاہتے اس کے ہاتھ پیر باندھ کر لے آئیں اور مہنتیش جیسے اچھے امیدوار کو جتانے کی ہر ممکن کوشش کریں۔ بدعنوانی بڑبولے پن ،جملے بازی اور تکبر کو بی جے پی کے خلاف مدعا بنانے میں مصروف کانگریس کو ایڈی یورپا کے اس بیان نے بیٹھے بٹھائے ایک اور مفت میں مدعا دے دیا ہے ۔ کرناٹک میں انتخابی مہم آخری مرحلے میں ہے، سیاسی ماحول گرم ہے اور ایسے میں زبان کا پھسل جانا قدرتی ہے، کئی بار اسی وجہ سے بات کا بتنگڑبھی بن جاتا ہے ۔دوسری جانب کانگریس نے آج الزام لگایا کہ ملک میں دلتوں پرظلم و زیادتی کے واقعات اپنی انتہا پر پہنچ گئے ہیں لیکن وزیر اعظم نریندر مودی ان پر توجہ دینے کے بجائے کرناٹک اسمبلی کے الیکشن مہم میں مصروف ہیں۔کانگریس کے ترجمان پی ایل پونیا نے یہاں پارٹی ہیڈکوارٹر میں معمول کی پریس بریفنگ میں کہا کہ مدھیہ پردیش سے حیران کردینے والی خبر آئی ۔ انتظامیہ نے دلت فرقہ کے لوگوں سے اپنے گھر میں شادی کی اطلاع تین دن قبل پولیس کو دینے کے لئے کہا ہے ۔ انہوں نے اس پر سوال اٹھاتے ہوئے کہا کہ یہ دلتوں کے لئے ہی کیوں ضروری ہے ۔ پولیس کا کہنا ہے کہ اس سے دلتوں کی حفاظت کرنے میں مدد ملے گی اور گڑبڑی کرنے والوں کو پکڑا جاسکے گا۔مسٹر پونیا نے کہا کہ ایس سی ایس ٹی انسداد زیادتی قانون کے سلسلے میں سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد دلتوں کی زیادتیوں کے سلسلے میں ایف آئی آر درج نہیں ہورہے ہیں۔ ملک میں دو طرح کے قانون چل رہے ہیں۔ ایک میں الزام کے بعد گرفتاری ہوجاتی ہے اورجب کہ دوسرے میں جانچ اور اجازت کے بعد ہی گرفتاری ممکن ہے ۔ انہوں نے الزام لگایا کہ حکومت سپریم کورٹ میں دلتوں کا موقف مناسب طریقے سے نہیں رکھ رہی ہے حالانکہ مسٹر مودی دلتوں کی فلاح بہبود کے بلند بانگ دعوے کرتے ہیں۔ کانگریس رہنما نے الزام لگایا کہ ملک میں دلتوں پر زیادتی اپنی انتہا پر ہے لیکن مرکز کی پوری حکومت کرناٹک میں الیکشن میں مصروف ہے ۔وہیں وزیر اعظم نریندر مودی نے کانگریس پر حملے جاری رکھتے ہوئے کہا کہ کانگریس پارٹی ’بانٹو اور راج کرو‘کی سیاست میں مہارت رکھتی ہے اور بڑے افسوس کی بات ہے کہ وہ ذات کی بنیاد پر مجرموں کی درجہ بندی کرنے سے بھی نہیں ہچکچا تی ہے ۔ کرناٹک اسمبلی کے لئے 12 مئی کو ہونے والے انتخابات کے پیش نظر آج یہاں منعقدہ انتخابی ریلی سے خطاب کرتے ہوئے مسٹر مودی نے کہا کہ جھوٹ پھیلانا کانگریس کا کاروبار بن چکاہے ۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: