سرورق / خبریں / جامعہ ہمدردمیں معیار تعلیم،امتیاز سے پاک داخلہ اور مسابقت سے کوئی سمجھوتہ نہیں ۔ وائس چانسلر پروفیسر احتشام حسنین –

جامعہ ہمدردمیں معیار تعلیم،امتیاز سے پاک داخلہ اور مسابقت سے کوئی سمجھوتہ نہیں ۔ وائس چانسلر پروفیسر احتشام حسنین –

نئی دہلی، (یو این آئی) جامعہ ہمدرد کے وائس چانسلر ڈاکٹر سید احتشام حسنین نے اگلے سال سے ماس کمیونی کیشن کا کورس شروع کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہاکہ جامعہ ہمدردمیں معیار تعلیم،امتیاز سے پاک داخلہ اور مسابقت سے کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جاتا۔ یہ بات انہوں نے آج یہاں منعقدہ ایک پریس کانفرنس میں کہی۔
انہوں نے کہاکہ ماس کمیونی کیشن کا پورا خاکہ تیار کرلیا گیا ہے اور میڈیا کورس کے بارے میں ضروری انتظامات کئے جارہے ہیں۔ انہوں نے ساتھ ہی کہاکہ شعبہ اردو بھی جامعہ ہمدرد میں کھولنے کے بارے میں غور کیا جارہا ہے اور اس پر کام کیا جائے گا لیکن پریشانی یہ ہے کہ جامعہ ہمدرد اس وقت مکمل یونیورسٹی نہیں ہے جیسے ہی مکمل یونیورسٹی بن جائے گی شعبہ اردو بھی کھل جائے گی۔
انہوں نے کہاکہ معیار تعلیم اور مسابقت کے ہمارے رجحان کا نتیجہ ہے کہہ ہندوستان میں 23ویں بہترین یونیورسٹی کا درجہ جامعہ ہمدرد کو حاصل ہے۔ انہو ں نے کہاکہ فارمیسی کا شعبہ میں دہلی میں نمبر ایک پرہے جب کہ ملک کا دوسرا بہترین فارمیسی اسکول ہے اور دہلی میں ہم میڈیکل (ایم بی بی ایس) کی تعلیم میں تیسرے نمبر پر ہیں جب کہ ملک میں 11ویں نمبر ہیں۔انہوں نے کہاکہ پہلا نمبر آل انڈیا انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنس کو حاصل ہے۔انہوں نے کہاکہ جامعہ ہمدرد کے بارے میں کئی غلط فہمیاں پائی جاتی ہیں جس کی وجہ سے اس کے بارے میں لوگوں زیادہ معلوم نہیں ہے۔اس کی ایک وجہ یہ بھی ہے کہ ہم نے کبھی اس کے بارے میں بتانے کی کوشش نہیں کی۔
انہوں نے کہاکہ نیک نے جامعہ ہمدرد کو تینوں مرحلے میں ’اے گریڈ‘ دیا ہے ۔انہوں نے کہاکہ دیگر یونیورسٹی کے مقابلے میں ہمارے یہاں پیپر کم نہیں لکھے جاتے ہیں بلکہ بہت سی یونیورسٹی کے مقابلے میں ہمارے یہاں زیادہ کام ہوا ہے زیادہ پیپر لکھے گئے ہیں لیکن ہم اس بارے میں ذرائع ابلاغ کو بتانے میں ناکام رہے ہیں جس کی وجہ ہم پر اس طرح کی ایجنسیوں کی نظر نہیں پڑتی۔
پروفیسر حسنین نے مزید کہاکہ ہمارا ایک کیمپس کنور (کیرالہ) میں بھی ہے جہاں جنرل کورس پڑھائی جاتی ہے اور وہاں بھی اچھا کام ہورہا ہے۔ انہوں نے جامعہ ہمدردکی سرگرمیوں کے بارے میں بتاتے ہوئے کہاکہ گزشتہ دنوں تیزاب حملے پر ہمارے یہاں ایک پروگرام کیا گیا جس میں اس سلسلے میں تدارکی اقدامات اور حملے کے شکار متاثرہ کے علاج و معالجہ پر غور کیا گیا تھا۔انہوں نے کہاکہ ٹی بی مریضوں کی سہولت کے لئے ڈاٹ کا سنٹر کھولا گیا ہے جہاں طب یونانی کی مدد سے اس مرض پر جلد قابو پانے کی تدابیر کی کوشش کی جارہی ہے اور اس کا نتیجہ جلد نکلنے والا ہے۔انہوں نے طب یونانی کی اہمیت اور اس میدان میں جامعہ ہمدرد کے کارنامے کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں طب یونانی پر ناز ہے اور یہاں طب یونانی میں بہت اچھا کام ہورہا ہے۔
انہوں نے مزید کہاکہ جامعہ ہمدرد میں سول سروس کے امتحان کی بھی تیاری کرائی جاتی ہے جہاں امید افزا نتائج سامنے آرہے ہیں۔اس کے علاوہ ریاستی سول سروس ،سب آرڈینیٹ سروس کی کوچنگ بھی شرو ع کی گئی ہے جس میں ڈپٹی کمانڈیٹ کے علاوہ انڈر سکریٹری‘ ڈپٹی سکریٹری تک ہوتے ہیں۔ سپریم کورٹ کے ڈیمڈ یونیورسٹی کے بارے میں ہدایت کے بارے میں پوچھے گئے سوال کے جواب میں کہا کہ سپریم کورٹ نے جن ڈیمڈیونیورسٹیوں کا ذکر کیا ہے ان میں جامعہ ہمدرد نہیں آتا۔ اس کے علاوہ انہوں نے کہاکہ شفافیت کو برقرار رکھنے کے لئے ہمارے داخلہ حکومت کے گائڈ لائنز کے مطابق ہوتے ہیں۔ ہم کوئی ٹسٹ نہیں کراتے بلکہ حکومت کے مشترکہ ٹسٹ سے ہی چن کر آتے ہیں۔
اس کے علاوہ انہوں نے کہاکہ آسیان انسٹی ٹیوٹ آف انشورنس اینڈرسک منیجمنٹ (اے آئی آئی آر ایم) کے تعاون انشورش میں ایم بی اے کورس بھی شروع کیا ہے۔ پریس کانفرنس میں پرووائس چانسلر احمد کمال، رجسٹرار ایس ایس اختر، مسٹر مکیش کمار جنرل انشورنس اور مسٹر اروند سنگھل آسیان انشورنس بھی شریک تھے۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: