سرورق / خبریں / بی جے پی کی غلط اطلاع پر چھاپہ مارا گیا: منیار کا بیان

بی جے پی کی غلط اطلاع پر چھاپہ مارا گیا: منیار کا بیان

گنگاوتی: بیرونی آبادی مسجد کے صدر اور ٹاؤن بلاک کانگریس صدر شاہ میر نیارنے الزام لگایا ہے کہ بی جے پی والوں نے انتخابی افسر کو غلط اطلاع دے کر دانستہ طور پر چھاپہ ڈلوایا ہے۔ اقبال انصاری کے گھر میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ انتخابی افسر اور پولیس نے چھاپہ مارا اور اسی وقت 30ہزار روپئے ضبط کئے۔ یہ رقم بھی اپنے گھر کے نیچے والے گھر سے آئی کرایہ کی رقم ہے۔ انتخابات میں استعمال کرنے کیلئے رکھی گئی رقم نہیں۔ انہوں نے کہا کہ چھاپہ مارنے والے افسران کو بھی قانون کا علم نہیں ہے۔ ضبط شدہ رقم کس کے پاس رکھی جائے اس پر بھی الجھن ہے انہوں نے کہا کہ اس تعلق سے دستاویزات پیش کر کے قانونی جدوجہد کروں گا۔ انہوں نے کہا کہ انتخابی نمائندوں کو تربیت دی گئی ہے۔ ہر شخص اپنے پاس 40ہزار روپئے رکھ سکتا ہے۔ لیکن بدنیتی کے ساتھ میرے گھر میرے ماں باپ کے گھر پہ چھاپہ مارا گیاہے لیکن انہیں وہاں کچھ بھی نہیں ملا۔ انہوں نے کہاکہ بی جے پی والوں نے ان دلالوں کو چھوڑا ہے۔ بعد میں بادامی مسجد کے صدر نور الدین قادری عرف نواب صاحب نے تقریر کرتے ہوئے کہا کہ سابق رکن پارلیمان ایچ راملو نے جب لوک سبھا ضلع کے انتخاب سے مقابلہ کیا تھا ایم ایس انصاری اور تمام مسلم طبقہ نے یک جٹ ہوکر انہیں انتخاب میں کامیاب بنایا تھا۔ لیکن وہ اب یہ بھول گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس کی جانب سے کوئی بھی مقابلہ کرے انجمن کمیٹی نے اس کی تائید کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس موقع پر بلال مسجد قبرستان کے صدر فخر الدین صاحب، نورانی مسجد کے صدر عبد الشکور، الٰہی کالونی کے صدر تاج الدین اور دیگر موجود تھے۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: