سرورق / خبریں / بی جے پی نے چدمبرم پر بیرون ملک دولت چھپانے کا الزام لگایا

بی جے پی نے چدمبرم پر بیرون ملک دولت چھپانے کا الزام لگایا

نئی دہلی، بھارتیہ جنتا پارٹی کی سینئر لیڈر اور وزیر دفاع نرملا سیتا رمن نے سابق وزیر خزانہ اور کانگریس کے سینئر لیڈر پی چدمبرم پر محکمہ انکم ٹیکس سے اپنے اثاثوں کو چھپانے کا الزام لگاتے ہوئے بدعنوانی کے معاملے میں ان کا موازنہ پاکستان کے سابق وزیر اعظم نواز شریف سے کیا ہے۔ محترمہ سیتا رمن نے آج یہاں پارٹی کے صدر دفتر میں صحافیوں کے ساتھ بات چیت میں کہا کہ مسٹر چدمبرم نے اپنے انکم ٹیکس کی تفصیلات بھرتے وقت برطانیہ کے کیمبرج میں اپنی پانچ کروڑ 37 لاکھ کی جائیداد کی تفصیلات نہیں دی ہيں اور اس کے علاوہ انہوں برطانیہ میں ہی دیگر مقامات پر 80 لاکھ روپے کے اپنےدیگر اثاثوں کا بھی ذکر نہیں کیا ہے۔
مسٹر چدمبرم نے امریکہ میں بھی اپنی 3.28 کروڑ کی جائیداد انکم ٹیکس کی تفصیلات میں نہیں بتائی ہے۔ انہوں نے کہا کہ مسٹر چدمبرم ترقی پسند اتحاد (یو پی اے) حکومت کے دور میں وزیر خزانہ اور وزیر داخلہ جیسے اہم عہدوں پر فائز رہے ہیں اسی لیے انکم ٹیکس کی تفصیلات میں اپنی املاک کی تفصیلات نہ دینا چارٹرڈ اکاؤنٹنٹ کی بھول نہیں کہی جا سکتی ہے۔
محترمہ سیتارمن نے کہا کہ محکمہ انکم ٹیکس نے مسٹر چدمبرم کے خلاف چار چارج شیٹ دائر کی ہیں اور ان کی جانچ چل رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ جاننا چاہتی ہیں کہ کیا کانگریس میں بھی نواز شریف جیسے لوگ ہیں اور کانگریس صدر راہل گاندھی جو خود نیشنل ہیرالڈ معاملے میں ضمانت پر ہیں، کیا مسٹر چدمبرم کے خلاف تحقیقات کرائیں گے؟ انہوں نے کہا کہ نواز شریف کو تو وہاں کے سپریم کورٹ نے بیرون ملک اپنی جائیداد کو انکم ٹیکس کی تفصیلات میں چھپانے کے معاملے میں پانچ سال کے لئے الیکشن لڑنے سے نااہل قرار دیا ہے، کیا کانگریس اپنی پارٹی کے ‘نواز شریف’ کے بارے میں کچھ کہے گی؟
وزیر دفاع نے کہا کہ مسٹر چدمبرم کے 21 غیر ملکی بینکوں میں کھاتے ہیں اور 14 ممالک میں ان کی جائیداد یں ہیں۔ ان سب کا پتہ لگایا جارہا ہے اور برطانیہ کی پراپرٹی کی تفصیل تو میڈیا میں بھی آ چکی ہے۔ اب وقت آ گیا ہے کہ راہل گاندھی بولے کیونکہ وہ اکثر بدعنوانی پر بولتے رہتے ہیں۔
محترمہ سیتارمن نے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی بیرونی ممالک میں جمع کالا دھن اور ہندوستان میں موجود کالا دھن کو باہر لانے کے لئے پرعزم ہیں اور یہ ان کا انتخابی وعدہ بھی تھا۔ بدعنوانی کو دور کرنے کے لئے ہی انہوں نے بیرونی ممالک میں جمع کالے دھن کو عام کرنے کے لئے انکم ٹیکس قانون 2015 میں ترمیم کی اور بیرون ملک میں جمع دولت کو اپنی انکم ٹیکس تفصیلات سے جزوی یا مکمل طور پر چھپانے کو غیر قانونی بنایا گیا ہے۔ایسے معاملے میں 120 فیصد جرمانے کا التزام ہے اور جیل بھیجے جانے کا بھی انتظام ہے۔ ان سے جب یہ پوچھا گیا کہ مسٹر چدمبرم کے بیرون ملک چھپائے گئے فنڈ کی معلومات کے ذرائع کیا ہیں تو انہوں نے کہا کہ میڈیا میں شائع ہونے والی خبروں کی بنیاد پر ہی وہ یہ الزام لگا رہی ہیں۔
ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ مسٹر چدمبرم نے 2016 کے انکم ٹیکس کی تفصیلات میں برطانیہ اور امریکہ کی جائیداد وں کا ذکر نہیں کیا ہے اور 2009 میں بھی انکم ٹیکس کی تفصیلات میں اس کا ذکر نہیں کیا۔ تاہم، انہوں نے یہ نہیں بتایا کہ امریکہ کے کس شہر میں ان کی جائیداد ہے۔ انہوں نے کہا کہ امریکہ اور کیمبرج میں پراپرٹی کی تفصیلات بھی انہیں میڈیا سے ملی ہیں، مگربرطانیہ میں 80 لاکھ کی جائیداد کا ذکر میڈیا میں نہیں آیا ہے۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: