سرورق / خبریں / بی جے پی دلت ارکان پارلیمان میں ناراضگی –

بی جے پی دلت ارکان پارلیمان میں ناراضگی –

لکھنؤ،  دلتوں کے تحفظ پر بھارتیہ جنتاپارٹی (بی جے پی)کے ہی کچھ ممبران پارلیمنٹ کے سوال ، حلیف پارٹیوں کے تلخ تیور اور پارٹی کے ایم ایل اے پر عصمت دری اور قتل کے الزام کے درمیان بی جے پی صدر آج لکھنؤ کے دورہ پر آرہے ہیں ۔ وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ کی دہلی میں وزیر اعظم نریندر مودی سے ملاقات کا اثر آج ریاست کی سیاست میں بھی نظر آسکتا ہے ۔ کچھ دلت رکن پارلیمنٹ کی بغاوت ، ایم ایل سی کے لئے 13 سیٹوں پر انتخاب اور آنے والے دنوں میں وزارت میں تبدیلی جیسے اہم ایشوز پر پارٹی صدر ریاست کی صورت حال کا جائزہ لیں گے ۔پسماندہ طبقہ فلاح و بہبود کے وزیر اوم پرکاش راج بھر سے بھی ان کی ملاقا ت متوقع ہے ۔دریں اثنا بی جے پی کے اناؤ سے رکن اسمبلی پر عصمت دری اور قتل کا بھی الزام ہے ۔ بی جے پی کے اعلی عہدیدار بھی میٹنگ میں شامل ہونے کے لئے پارٹی آفس کے چکر لگا رہے ہیں ۔اس وقت مسٹر شاہ کا یہ ایک روزہ دورہ ہے ۔ دلت رکن پارلیمنٹ کی بغاوت اور ایم ایل سی کی سیٹوں پر ہونے والے انتخابات کے پیش نظر مسٹر شاہ کے اس دورے کو اہم سمجھا جارہا ہے ۔ مانا جا رہا ہے کہ ان کے اس دورے سے پارٹی کے اندر چل رہی بغاوت پر روک لگے گی ۔ بی جے پی کے زیر اقتدار ریاست میں دلت تحریک کو لیکر اندرونی اور باہری دونوں قسم کے چیلنجوں کا پارٹی کو سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔ ڈیمیج کنٹرول کے لئے بی جے پی نے اپنی ہی پارٹی کے دلت لیڈروں کو آگے کیا ہے ۔ حکومت کی حلیف سہیل دیو بھارتیہ سماج پارٹی (بی ایس پی ) کے صدر اور اور پسماندہ طبقہ کے بہبود کے وزیر اوم پرکاش راج بھر کا بھی معاملہ زیر غور ہوگا ۔ مسٹر راج بھر بھی طویل عرصے سے اپنی ہی سرکار کے خلاف بیان بازی کر رہے ہیں ۔ امید ہے کہ بی جے پی صدر کے دورے کے بعد ان کا حل نکل آئے گا ۔

 

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: