سرورق / خبریں / بہار وزیر اعلی نتیش کمار نے پہلی مرتبہ کی نوٹ بندی کی تنقید ، سشیل مودی کو دینی پڑ گئی صفائی

بہار وزیر اعلی نتیش کمار نے پہلی مرتبہ کی نوٹ بندی کی تنقید ، سشیل مودی کو دینی پڑ گئی صفائی

پٹنہ : وزیر اعظم نریندر مودی کے نوٹ بندی کے فیصلہ کی کئی مرتبہ حمایت کرچکے بہار کے وزیر اعلی نتیش کمار نےاب پہلی مرتبہ اس فیصلہ پر سوال اٹھایا ہے۔ نتیش کمار نے کہا کہ نوٹ بندی کے دوران بینکوں نے اپنا کام ٹھیک سے نہیں کیا ، یہی وجہ ہے کہ لوگوں کو نوٹ بندی کا جتنا فائدہ ملنا چاہئے تھا وہ نہیں مل پایا۔ وزیر اعلی نے کہا کہ میں نوٹ بندی کا حامی تھا ، لیکن اس قدم سے کتنے لوگوں کو فائدہ ملا ؟ کچھ لوگوں نے اپنا نقدی پیسہ ادھر سے ادھر کرلیا۔
بینکوں کی ریاستی سطح کی بینکرس کمیٹی کی سہ ماہی جائزہ میٹنگ کو خطاب کرتے ہوئے نتیش کمار نے کہا کہ آپ چھوٹے لوگوں سے قرض کا پیسہ تو وصول لیتے ہیں ، لیکن ان لوگوں کا کیا جو بڑے بڑے لون لیتے ہیں اور غائب ہوجاتے ہیں۔ کتنی حیرت کی بات ہے کہ بڑے بڑے افسران تک کواس کی بھنک نہیں لگتی ، بینکنگ سسٹم میں بڑے پیمانے پر اصلاحات کی ضرورت ہے ، میں تنقید نہیں کررہا ہوں ، لیکن اس کو لے کر فکر مند ضرور ہوں۔
نتیش کمار نے یہ کہہ کر ایک طرح سے پنجاب نیشنل بینک میں حال ہی میں ہوئے نیرو مودی گھوٹالہ کی طرف اشارہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ چھوٹے قرض داروں کو دئے قرض کو لے کر تو بینک کافی سخت نظر آتے ہیں ، لیکن ایسی ہی سختی بڑے قرض داروں کے معاملہ میں کیوں نہیں دکھائی جاتی۔
ادھر بہار کے نائب وزیر اعلی اور بی جے پی کے سینئر لیڈر سشیل مودی نے نتیش کمار کے بیان پر صفائی پیش کی ہے۔ صحافیوں سے بات چیت میں سشیل مودی نے کہا کہ نتیش کے کہنے کا مطلب یہ نہیں تھا کہ نوٹ بندی اپنے مقصد میں ناکام رہی۔ سشیل مودی نے کہا کہ یہ سمجھنا پوری طرح سے غلط ہوگا ۔ وزیر اعلی نے یہ نہیں کہا کہ نوٹ بندی ناکام رہی ۔ انہوں نے یہ کہا کہ نوٹ بندی پر عمل کرتے وقت کچھ بینکوں کا رول ٹھیک نہیں رہا ، اس وقت جن نوٹوں کو چلن سے باہر کیا گیا تھا ، ان کے غلط طریقہ سے جمع ہونے کی خبریں بھی آئی تھیں۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: