سرورق / بین اقوامی / بھوک سے تین بچیوں کی موت پر کیجری وال حکومت اپوزیشن کے نشانہ پر –

بھوک سے تین بچیوں کی موت پر کیجری وال حکومت اپوزیشن کے نشانہ پر –

نئی دہل ، مشرقی دہلی کے منڈاولی علاقہ میں ایک ہی خاندان کی تین بچیوں کی مبینہ طورپر بھوک سے ہوئی موت کے بعد اروند کیجرحکومت نشانہ پر ہے ۔
منڈاولی میں آٹھ سال کی مانسی ،چار سال کی شکھا اور دوسال کی پارول کی لاشیں ایک کمرے میں ملی تھیں۔بچیوں کی ماں کی ذہنی حالت اچھی نہیں ہے ۔ماں کا کہنا تھا کہ بچیوں کی طبیعت خراب ہونے کی وجہ سے انھیں کھانا نہیں دیاتھا ۔بچیوں کو کھانسی اور الٹی ہورہی تھی ۔
پہلی پوسٹ مارٹم رپورٹ میں تینوں بچیوں کی موت کی غذائیت کی کمی بتائی گئی ہے ۔پوسٹ مارٹم کرنے والے ڈاکٹروں کا کہنا ہے ان بچیوں کو پچھلے ساتھ آٹھ دن سے کھانا نہیں ملاتھا۔اس معاملہ میں دوسری پوسٹ مارٹم رپورٹ میں بھی موت کی وجہ یہی بتائی جارہی ہے ۔
یہ علاقہ نائب وزیراعلی اور وزیرتعلیم منیش سسودیہ کے اسمبلی حلقہ میں ہے ۔مسٹرسسودیہ جمعرات کو متوفی بچیوں کے گھر گئے ۔اس معاملہ میں عدالتی جانچ کا حکم پہلے ہی دیاجاچکا ہے ۔
مسٹر سسودیہ نے بچیوں کی ماں سے ملاقات کرنے کے بعد کہاکہ غریبی اور فاقہ کشی کی وجہ سے بچیوں کی موت ہوئی ہے جو ہمارے لئے انتہائی دکھ اور تشویش کی بات ہے ۔انھوں نے کہاکہ بچیوں کی ماں کی ذہنی حالت بھی ٹھیک نہیں ہے ۔حکومت کی طرف سے 25ہزار روپئے کی مالی مدد دی جارہی ہے ۔ماں کو اسپتال میں داخل کرایاجارہاہے اور حکومت انکے علاج کا خرچ برداشت کرے گی ۔ادھر بچیوں کے باپ کا بھی پتہ نہیں چل سکا ہے اور انکی تلاش جاری ہے ۔
انھوں نے اس طرح کے واقعہ کو نظام کی ناکامی قراردیتے ہوئے کہاکہ اس بات کی جانچ کی بھی ہدایت دی گئی ہے کہ ایجنسیوں کے پاس اس خاندان کی غریبی کی جانکاری تھی کہ نہیں ۔دہلی میں پھر سے ایسا واقعہ پیش نہ آئے اس کے لئے اقدامات کئے جائیں گے ۔
دہلی کانگریس کے صدر اجے ماکن پارٹی کے دیگر لیڈروں کے ساتھ جمعرات کو متوفی بچیوں کی ماں سے ملنے گئے ۔انھوں نے کہاکہ ملک کی راجدھانی میں بھوک سے تین بچیوں کی موت ہوجائے اس سے بڑے دکھ کی بات نہیں ہوسکتی ،اسکا جواب حکومت کو دینا ہوگا ۔
مسٹر ماکن نے کہا کہ نائب وزیراعلی کے حلقہ میں ایسا واقعہ ہونا انتہائی شرم کی بات ہے ۔
دہلی بھارتیہ جنتا پارٹی کے صدر منوج تیواری نے اس واقعہ کے لئے مسٹر سسودیہ کو آڑے ہاتھوں لیا ۔انھوں نے کہاکہ نائب وزیر اعلی کے علاقہ میں ایساواقعہ شرم کی بات ہے ۔وہ متاثرہ خاندان سے ملنے منڈاولی گئے تھے اور 50ہزار روپئے کی مالی امداد کا اعلان کیاجس میں سے 10ہزار روپئے نقد فراہم کئے گئے ہیں ۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: