سرورق / بین اقوامی / بابری مسجد معاملے کی آج دوبجے عدالت عظمیٰ میں ہوگی سماعت –

بابری مسجد معاملے کی آج دوبجے عدالت عظمیٰ میں ہوگی سماعت –

نئی دہلی: بابری مسجد ، رام مندر معاملہ کی آج پھر عدالت عظمی میں سماعت ہوگی۔ سپریم کورٹ میں معاملے کی سماعت آج 2 بجے سماعت شروع ہوگی۔ آج کی سماعت میں مسلم فریق ایک بار پھر اپنی دلیلیں رکھیں گے۔ آج کی سماعت میں راجیو چندرن ایڈوکیٹ سپریم کورٹ میں معاملے سے متعلق مسائل سے روبرو کرائیں گے۔ راجیو چندرن عدالت میں اپنی دلیل سے یہ ثابت کریں گے کہ فاروقی کیس کو کیوں آئینی بنچ کے ساتھ بھیجا جائے۔ ساتھ ہی کس طرح سے یہ معاملے کثیر ازدواج اور طلاق ثلاثہ جیسے مسائل سے اہم ہے، یہ بھی ثابت کریں گے۔
اس سے قبل 6 اپریل کو بابری مسجد معاملے کی سماعت کی دوران جمعیۃ علماء ہند کی جانب سے پیش وکیل ڈاکٹر راجیو دھون نےمعاملہ کو آئینی بینچ کے سپرد کرنے کا مطالبہ کیا تھا ۔ انہوں نے چیف جسٹس دیپک مشرا کی صدارت والی تین رکنی بینچ سے کہا کہ یہ معاملہ کثرت ازدواج اور نکاح حلالہ سے زیادہ اہمیت کا حامل ہے، اس لئے اس کو آئینی بینچ کے سپرد کیا جائے۔ خیال رہے کہ گزشتہ دنوں ہی چیف جسٹس آف انڈیا نے کثرت ازدواج اور نکاح حلالہ کے معاملے کو آئنی بینچ کے حوالے کردیا تھا۔
ڈاکٹر راجیو دھون کے اس مطالبہ پر سپریم کورٹ نے کہا کہ سبھی فریقوں کو سننے کے بعد ہی اسے آئینی بینچ کو سونپنے کے بارے میں فیصلہ کیا جائے گا۔ ڈاکٹر راجیو دھون نے عدالت کو بتایا کہ یہ انصاف کا تقاضا ہے کہ بابری مسجد ملکیت تنازعہ کی سماعت کثیر رکنی بینچ کے سپرد کی جائے کیونکہ یہ بہت حساس معاملہ ہے اور ضخیم ریکارڈ بھی اس بات کی اجازت نہیں دیتے کہ اس معاملے کی سماعت میں تاخیر ہو۔
ڈاکٹر راجیو دھون نے سپریم کورٹ کی جانب سے دیئے گئے اسماعیل فاروقی فیصلہ میں کی گئی غلطیوں کو عدالت کے سامنے تفصیل سے اجاگر کیا جس کا سہارا لیکر الہ آباد ہائی کورٹ نے اپنے فیصلہ میں کہا تھا کہ نماز کہیں بھی ادا کی جاسکتی ہے جو درست نہیں ہے۔ آج بھی ڈاکٹر راجیو دھون کی بحث نا مکمل رہی جس کے بعد عدالت عظمیٰ نے اپنی سماعت 27 اپریل تک کے لئے ملتوی کردی ہے۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: