سرورق / بین اقوامی / ایمنسٹی انٹر نیشنل کی میانمار کے اعلیٰ فوجی افسران کے خلاف کارروائی کی سفارش –

ایمنسٹی انٹر نیشنل کی میانمار کے اعلیٰ فوجی افسران کے خلاف کارروائی کی سفارش –

نیویارک، انسانی حقوق سے وابستہ بین الاقوامی ادارہ ایمنسٹی انٹرنیشنل نے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ میانمار میں اقلیتی روہنگیا پناہ گزینوں کے ساتھ جس طرح کا برتاؤ ہوا ہے اسے انسانیت کے خلاف جرائم مان کر ٹاپ فوجی افسران اور کمانڈروں کے خلاف کارروائی کی جانی چاہئے۔ ایمنسٹی انٹر نیشنل نے منگل کو سلامتی کونسل سے اس رپورٹ کو بین الاقوامی فوجداری عدالت میں لے جانے کا بھی زور دیا ہے اور میانمار کے خلاف ہتھیاروں کی خریداری پر روک لگانے اور سینئر فوجی افسران کے خلاف مالی پابندیاں لگانے کی بات کہی گئی ہے۔
ایمنسٹی انٹر نیشنل نے ر وہنگیا پناہ گزینوں کے حالات کے بارے میں گزشتہ سال ستمبر میں اپنی انکوائری شروع کی تھی اور اس رپورٹ میں کہا ہے کہ ایسا لگتا ہے کہ فوج نے شمالی رخائن صوبے میں روہنگیا آبادی کو سزا دینے کا پہلے سے منظم منصوبہ تیار کیا گیا تھا تاکہ انہیں ملک سے باہر دھکیلا جا سکے۔ اسی دوران ان لوگوں کے اوپر طرح طرح کے مظالم ڈھائے گئے ۔ رپورٹ میں سب سے ٹاپ جنرل منگ آنگ ہلینگ ، میانمار دفاعی سروسز کے کمانڈر اور ان کے ماتحت فوجی کمانڈر، ذیلی فوجی جنرل سوئی ون اور مختلف یونٹس کے کمانڈر شامل ہیں۔ اس رپورٹ میں آٹھ دیگر فوجی ارکان اور بارڈر گارڈ پولیس کے تین ممبروں کے نام بھی شامل ہیں۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: