سرورق / خبریں / ایمس سے چھٹی : رانچی بھیجے جانے کو لالو پرساد یادو نے بتایا سازش ، ایمس میں حامیوں نے کیا ہنگامہ

ایمس سے چھٹی : رانچی بھیجے جانے کو لالو پرساد یادو نے بتایا سازش ، ایمس میں حامیوں نے کیا ہنگامہ

نئی دہلی : چارہ گھوٹالے کے دو معاملوں میں قصوروار بہار کے سابق وزیر اعلی اور راشٹریہ جنتا دل (آر جے ڈی) کے سربراہ لالو پرساد یادو کو آج یہاں آل انڈیا انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنس (ایمس) سے چھٹی دے دی گئی اور انہیں رانچی کے میڈیکل کالج کے لئے ریفر کر دیا گیا۔ مسٹر لالو یادو کو گزشتہ دنوں ایمس میں داخل کرایا گیا تھا۔ آج کانگریس صدر راہل گاندھی نے بھی مسٹر لالو یادو سے ملاقات کر کے ان کی صحت کے بارے میں معلومات حاصل کیں۔
ایمس سے ڈسچارج کئے جانے کے بعد مسٹر یادو نے صحافیوں سے کہا کہ انہیں ان کی مرضی کے بغیر اور ان کا علاج مکمل کئے بغیر ہی اسپتال سے چھٹی دے دی گئی۔ انہوں نے الزام لگایا کہ بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) اور وزیر اعظم نریندر مودی کی سازش کے تحت انہیں اسپتال سے ڈسچارج کیا گیا ہے۔
واضح رہے کہ مسٹر لالو یادو نے کل ایمس کے سربراہ کو خط لکھ کر کہا تھا کہ انہیں رانچی ایمس نہ بھیجا جائے۔ آر جے ڈی کے لیڈر نے یہ بھی الزام لگایا کہ ان کے ساتھ سخت تشدد کا سلوک کیا گیا اور سازش کے تحت ان کی صحت سے کھلواڑ کیا گیا اور ان کا مناسب علاج نہیں کیا گیا۔ انہوں نے ایمس میں اپنے علاج کے لیے مناسب سہولت نہیں دیئے جانے کی بھی شکایت کی۔ انہوں نے کہا کہ پوری دنیا کو یہ بات بتائیں گے کہ ان کی صحت کے ساتھ کس طرح سے کھلواڑ کیا گیا۔
دریں اثنا آر جے ڈی کے حامیوں نے ایمس میں توڑ پھوڑ کرنے کی بھی کوشش کی اور مسٹر یادو کو اسپتال سے چھٹی دیئے جانے کی مخالفت کی۔ مسٹر یادو کو جب ایمس سے چھٹی دی گئی تو بڑی تعداد میں آر جے ڈی کے کارکن اور حامی موجود تھے اور صحافیوں کی بھیڑ بھی موجود تھی۔ بھیڑ کو دیکھتے ہوئے بڑی تعداد میں سکیورٹی عملہ بھی تعینات کئے گئے تھے۔ مسٹر لالو یادو اسپتال سے نکلنے کے بعد رانچی راجدھانی ایکسپریس سے رانچی کے لیے روانہ ہو گئے۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: