سرورق / کھیل / ایشیائی کھیلوں میں واپسی ہے مقصد: دیپا

ایشیائی کھیلوں میں واپسی ہے مقصد: دیپا

نئی دہلی، ریو اولمپک میں تاریخی چوتھا مقام حاصل کرنے والی ہندستانی خاتون جمناسٹ دیپا کرماکر گھٹنے کی چوٹ کی وجہ سے چار اپریل سے شروع ہونے والے گولڈ کوسٹ دولت مشترکہ کھیلوں میں حصہ نہیں لے پائیں گی لیکن انہوں نے اپنے لئے اگست کے ایشیائی کھیلوں میں واپسی کا ہدف رکھا ہے۔24 سال کی دیپا نے پیر کو یہاں ہندستانی اولمپک ایسوسی ایشن (آئی اواے) کے پروگرام کے موقع پر صحافیوں کو بتایاکہ مجھے واقعی بہت دکھ ہے کہ میں دولت مشترکہ کھیلوں میں حصہ نہیں لے پا رہی ہوں۔اگر میں ان کھیلوں میں حصہ لیتی تو ملک کے لئے ضرور میڈل جیتتی۔میں نے 2014 میں گزشتہ گلاسگو دولت مشترکہ کھیلوں میں کانسی کا تمغہ جیتا تھا۔تریپورہ کی دیپا دولت مشترکہ کھیلوں میں تمغہ جیتنے والی واحد ہندستانی خاتون جمناسٹ ہیں۔ دیپا کو گزشتہ سال اپریل میں ایشیائی چمپئن شپ کے دوران پریکٹس سیشن کے وقت یہاں اندرا گاندھی انڈور اسٹیڈیم میں گھٹنے میں چوٹ لگ گئی تھی۔دیپا اس کے بعد سے ابھی تک چوٹ سے نجات پا رہی ہیں اور ایک بھی مقابلہ میں نہیں کھیل پائی ہیں۔چوٹ کی وجہ سے ہی وہ ایشیائی چمپئن شپ میں بھی حصہ نہیں لے سکی تھیں۔دیپا کے کوچ اور درون اچاریہ ایوارڈي بشویشور نندی نے بھی کہا کہ دیپا کے لئے انہوں نے ایشیائی کھیلوں میں واپسی کا ہدف رکھا ہے۔کوچ نے کہاکہ ہم چاہتے ہیں کہ دیپا بالکل فٹ ہو کر اتریں تاکہ وہ ملک کے لئے تمغہ جیت سکیں ۔اپنی مشق شروع کر چکی دیپا نے ساتھ ہی کہا کہ ملک کے لوگوں کی محبت اور آشیرواد ان کے ساتھ بنا رہنا چاہئے جس کی بدولت وہ ملک کے باشندوں کے لئے تمغہ جیت سکیں۔انہوں نے کہاکہ میرا اگلا ہدف اس سال اگست میں جکارتہ میں ہونے والے ایشیائی کھیلوں میں تمغے جیتنا ہے۔ا سٹار جمناسٹ نے اس بات پر خوشی ظاہر کی کہ ہندستانی جمناسٹ عالمی منظر نامے پر ان کے نشان چھوڑنے لگے ہیں۔انہوں نے میلبورن میں عالمی کپ میں کانسی کا تمغہ جیتنے والی ارونا بدھا ریڈی کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ ارونا نے ایک بڑا مقام حاصل کیا ہے اور یہ دیکھ کر اچھا لگ رہا ہے کہ ہندوستانی اب جماسٹك میں بھی تمغہ جیتنے لگے ہیں۔دیپا نے آسٹریلیا کے گولڈ کوسٹ جانے والے ہندوستانی جمناسٹ کو اپنی نیک خواہشات دیتے ہوئے کہاکہ میں امید کرتی ہوں کہ وہ گولڈ کوسٹ میں زیادہ تمغے جیتیں۔جمناسٹک آگے بڑھ رہا ہے اور ہندستانی کھلاڑی مستقبل میں زیادہ اچھی کارکردگی کریں گے۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

وزیر کھیل راٹھور سے ملے لکشے سین –

نئی دہلی، جونیئر ایشیائی بیڈمنٹن چمپئن شپ میں 53 سال کے طویل وقفے کے بعد …

جواب دیں

%d bloggers like this: