سرورق / بین اقوامی / انڈونیشیا : تین گرجا گھروں پر خود کش حملے، مرنے والوں کی تعدادچھ ہوگئی

انڈونیشیا : تین گرجا گھروں پر خود کش حملے، مرنے والوں کی تعدادچھ ہوگئی

جکارتہ، انڈونیشیا کے دوسرے سب سے بڑے شہر سورابايا کے تین گرجا گھروں پر آج ہوئے خودکش حملوں میں کم از کم چھ افراد ہلاک اور 35 سے زائد دیگر زخمی ہو گئے۔ پولیس نے میڈیا کو بتایا کہ یہ حملے خود کش حملہ آوروں کی جانب سے کئے گئے۔مشرقی جاوا پولیس کے ترجمان فرینس برونگ منگیرا نے بتایا،’’ ہلاک شدگان کی شناخت کی جا رہی ہے‘‘۔
میڈیا رپورٹس کے مطابق ایک چرچ کے باہرسیکورٹی کاعملہ ایک عورت اور اس کے دو بچوں کو روك کر ان سے پوچھ گچھ کر رہا تھا۔ ٹیلی ویژن سے حاصل تصاویر کے مطابق ایک چرچ کے دروازے کے باہر دھماکہ میں تباہ ہونے والے موٹر سائیکلوں اور ملبہ کے بکھرے ہونے کی تصویر شائع کی ہیں ۔ پولیس نے اس کے آس پاس گھیرا بندی کر کے تفتیش شروع کر دی ہے۔ افسر اس بات کی تحقیقات کر رہے ہیں کہ کہیں چوتھے چرچ پر بھی تو دھماکے نہیں ہوا ہے۔ پولیس نے سورابایا کے تمام چرچوں کو عارضی طور پر بند کرنے کے احکامات جاری کئے ہیں۔ شہر میں ہونے والے فوڈ فیسٹول کو بھی منسوخ کر دیا گیا ہے۔ ان حملوں کی ذمہ داری ابھی تک کسی بھی تنظیم نے نہیں لی ہے۔
انڈونیشیا دنیا کا سب سے بڑا مسلم اکثریتی ملک ہے اور حالیہ دنوں میں دہشت گردی کے مسئلے سے دوچار ہے۔ انڈونیشیا نے امریکہ میں 2001 میں القاعدہ کی جانب سے کئے گئے حملوں کے بعد دہشت گردانہ سرگرمیوں کو قابو کرنے میں کامیابی پائی ہے لیکن حالیہ برسوں میں اسلامک اسٹیٹ کے بڑھتے ہوئے اثرات کی وجہ وہاں دہشت گردانہ سرگرمیوں میں اضافہ ہوا ہے۔ قابل غور ہے کہ انڈونیشیا میں اس سے پہلے بھی چرچوں کو نشانہ بنا کر حملے کیے جاتے رہے ہیں۔ سال 2000 میں کرسمس کی تقریب کے دوران حملے میں تقریبا 20 افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: