سرورق / خبریں / اناو عصمت دری معاملہ: ملزم بی جے پی ممبراسمبلی کو جیل بھیجا گیا –

اناو عصمت دری معاملہ: ملزم بی جے پی ممبراسمبلی کو جیل بھیجا گیا –

لکھنو: اناو میں لڑکی سے عصمت دری اور اس کے والد کے قتل معاملے میں ملزم بانگر مئو سے بی جے پی کے ممبراسمبلی کلدیپ سنگھ سینگر کو جمعہ کو انائو جیل بھیج دیاگیا۔ واضح رہے کہ کلدیپ سنگھ سینگر کی آج سی بی آئی ریمانڈ ختم ہوئی ہے۔ اس کے بعد سی بی آئی نے اسے خصوصی عدالت میں پیش کیا، جہاں سے اسے جیل بھیج دیاگیا۔ کہاجارہا ہے کہ کورٹ نے ممبراسمبلی کو پھر سے ریمانڈ پر دیئے جانے کے مطالبہ کو خارج کردیا، جس کے بعد انہیں اناو جیل میں شفٹ کردیاگیا۔ اس سے پہلے 22 اپریل کو اناو عصمت دری معاملے میں ممبراسمبلی کلدیپ سنگھ سینگر کے بھائی اتل سینگر اور اس کے 5 ساتھیوں کو عدالت میں پیش کیا گیاتھا، جہاں سی بی آئی کے دوبارہ ریمانڈ نہیں مانگنے پر کورٹ نے سبھی کو اناوضلع جیل بھیج دیا تھا۔
اس معاملے میں سی بی آئی نے ملزم اتل سنگھ کی فارچونر اور رائفل اپنے قبضے میں لے لیا۔ متاثرہ کے والد ہی قتل کے ملزم اور ممبراسمبلی کلدیپ سنگھ سینگر کے بھائی اتل سینگر اور اس کے 5 ساتھیوں کی ریمانڈ گذشتہ اتوار کو ختم ہوگئی تھی۔ واضح رہے کہ لڑکی سے عصمت کے ملزم بی جے پی ممبراسمبلی کلدیپ سنگھ سینگر نے بھائی اتل سنگھ کے خلاف مقدمہ نہ درج کرنے کے لئے انا و کی ایس پی پشپانجلی سےپیروی کی تھی۔ سینگر بھائی کی پیروی کرنے اسی دن پہنچے تھے، جس دن متاثرہ کے والد کی پٹائی کی گئی تھی۔ ذرائع کا کہناہے کہ 3 اپریل کو جب متاثرہ کے والد کی پٹائی کی گئی تو ممبراسمبلی شہر میں ہی تھے۔ حادثہ کے بعد انہوں نے ایس پی سے فون پر بات کی، اس کے بعد شام کو مقامی بلاک پرمکھ کے ساتھ بھائی کی پیروی کرنے کے لئے ایس پی کی رہائش گاہ پہنچ گئے۔ ذرائع کا دعوی ہے کہ سینگر نے بھائی کے خلاف مقدمہ درج نہ کرنے کے لئے ایس پی پر دبائو بنایا، جس کا اثر بھی دیکھنے کو ملا اور پولس نے متاثرہ کے والد کو ہی جیل بھیج دیا۔ اتنا ہی نہیں جب متاثرہ کے گھر والے مقدمہ درج کرانے گئے تو انہیں بھگا دیا گیا۔ بعد میں ضلع افسر اور لکھنو کے افسران کی مداخلت کے بعد مقدمہ درج کیا گیا، لیکن اس میں ممبراسمبلی کے بھائی کانام درج نہیں کیا گیا۔ ایس آئی ٹی نے اپنی رپورٹ میں بھی اس بات کا ذکر کیاہے۔

Leave a comment

About saheem

Check Also

کروناندھی کی حالت بگڑی –

چنئی (ایجنسیز) تملناڈو کے سابق وزیر اعلیٰ اور ڈی ایم کے کے سربراہ ایم کروناندھی …

جواب دیں

%d bloggers like this: