سرورق / کھیل / اسٹوکس کی آل راؤنڈ کارکردگی سے انگلینڈ نے برابری کی ون ڈے میں اپنے گھر میں مسلسل نو میچوں سے ناقابل تسخیر نیوزی لینڈ کا ریکارڈ توڑ دیا-

اسٹوکس کی آل راؤنڈ کارکردگی سے انگلینڈ نے برابری کی ون ڈے میں اپنے گھر میں مسلسل نو میچوں سے ناقابل تسخیر نیوزی لینڈ کا ریکارڈ توڑ دیا-

ماؤنٹ مانگ نوئی،  (یواین آئی) تقریباً پانچ ماہ بعد بین الاقوامی کرکٹ میں واپسی کرنے والے مین آف دی میچ بین اسٹوکس کی (42)رن پر دو وکٹ اور ناٹ آؤٹ 63 رن) آل راؤنڈ کارکردگی کی بدولت انگلینڈ نے نیوزی لینڈ کو بدھ کو دوسرے ون ڈے میچ میں 73 گیندیں باقی رہتے چھ وکٹ سے شکست دے کر پانچ میچوں کی ون ڈے سیریز میں1-1سے برابری کرلی۔ نیوزی لینڈ نے ٹاس ہارنے کے بعد پہلے بلے بازی کرتے ہوئے 49.4اوور میں 223 رن بنائے جسے انگلینڈ نے 37.5اوور میں چار وکٹ پر 225رن بنا کر حاصل کر لیا۔ اس جیت کے ساتھ ہی انگلینڈ نے ون ڈے میں اپنے گھر میں مسلسل نو میچوں سے ناقابل تسخیر نیوزی لینڈ کے ریکارڈ کو توڑ دیا۔اسٹوکس نے 74 گیندوں پر ناٹ آؤٹ 63 رن میں سات چوکے اور ایک چھکا لگایا۔ کپتان ایون مورگن نے 63 گیندوں پر چھ چوکوں اور تین چھکوں کی بدولت 62 رن کی اننگز کھیلی۔ جانی بیرسٹو نے 39 گیندوں پر 37 رن میں پانچ چوکے اور ایک چھکا لگایا۔ اس کے علاوہ وکٹ کیپر جوس بٹلر نے20؍گیندوں میں ناٹ آؤٹ 36رن کی طوفانی اننگز میں دو چوکے اور تین چھکے لگائے ،۔ بٹلر نے سینٹنر کی گیند پر چھکا مار کر ٹیم کو جیت دلا ئی۔ا سٹوکس نے مورگن کے ساتھ چوتھے وکٹ کے لئے 88اور بٹلر کے ساتھ پانچویں وکٹ کے لئے 51 رن کی ناٹ آوٹ ساجھے داری کرکے انگلینڈ کی جیت یقینی بنا ئی۔نیوزی لینڈ کے لئے ٹرینٹ بولٹ نے 46رن پر دو وکٹ اور لاکی فرگیوسن نے 48رن پر ایک وکٹ اور کولن منرو نے23؍رن پر ایک وکٹ حاصل کیا۔اس سے پہلے نیوزی لینڈ نے پہلے بلے بازی کرتے ہوئے 49.4اوور میں 223رن کا اسکور بنایا۔ سلامی بلے باز مارٹن گپٹل نے 87گیندوں پر سات چوکوں کی مدد سے 50اور آٹھویں نمبر کے بلے باز مشیل سینٹنر نے 52گیندوں پر چھ چوکوں اور ایک چھکے کی بدولت 63رن کی ناٹ آوٹ اننگز کھیلی۔کولن ڈی گرینڈھوم نے 40گیندوں پر 38رن میں چار چوکے اور ایک چھکا لگایا۔ وکٹ کیپر ٹام لاتھم نے 22اور لاکی فرگیوسن نے 19رن بنائے ۔ کیوی ٹیم کے پانچ بلے باز دہائی کے ہندسے تک بھی نہیں پہنچ سکے جبکہ چار بلے باز رن آوٹ ہوئے ۔انگلینڈ کے لئے معین علی نے 33 رن پر دو وکٹ، اسٹوکس نے 42 رن پر دو وکٹ اور کرس ووکس نے 42 رن پر دو وکٹ حاصل کئے ۔اسٹوکس کو ان کی آل راؤنڈ کارکردگی کے لئے مین آف دی میچ کا ایوارڈ ملا۔


Leave a comment

About saheem

Check Also

وزیر کھیل راٹھور سے ملے لکشے سین –

نئی دہلی، جونیئر ایشیائی بیڈمنٹن چمپئن شپ میں 53 سال کے طویل وقفے کے بعد …

جواب دیں

%d bloggers like this: